سعودی حکومت نے عازمین حج کی سہولتوں کے تمام انتظامات مکمل کر لئے

سعودی حکومت نے عازمین حج کی سہولتوں کے تمام انتظامات مکمل کر لئے

لاہور(ڈویلپمنٹ سیل)حج خدمات کی فراہمی سے متعلق سعودی حکومت کے تمام سرکاری محکموں اور پرائیویٹ اداروں نے حاجیوں کی سہولت اور آرام کے لئے تمام انتظامات مکمل کر لئے ہیں ۔ بلدیہ مکہ مکرمہ نے شہر ، منیٰ کی خیمہ بستی ، میدانِ عرفات اور مزدلفہ کی صفائی کے لئے 23 ہزار کارکن تعینات کر دیئے ہیں جو 24 گھنٹے شفٹوں میں اپنے فرائض انجام دیں گے ۔ استعمال شدہ اشیا ء اکٹھی کرنے کے لئے ہزاروں کچرہ دان رکھوائے گئے ہیں۔ محکمہ شہری دفاع نے 17ہزار اہلکار اور آگ بجھانے اور سیفٹی اقدامات کے لئے 3000گاڑیاں اور مشینیوں کو تیار رکھاہے ۔ مکہ مکرمہ اور مشاعرِ مقدسہ کے درمیان حاجیوں کی آمدورفت کے لئے 17 ہزاربسیں مہیاکی گئی ہیں ۔ ساڑھے چار ہزار سے زائد رضاکار مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ اور دیگر مقامات پر حاجیوں کی مدد اور راہنمائی کے لئے تعینات کئے گئے ہیں ۔ حاجیوں کو طبی امداد اور علاج معالجے کی سہولتیں فراہم کرنے کے لئے 2600افراد پر مشتمل طبی عملہ تعینا ت کیا ہے ۔ ان میں ڈاکٹرز، نرسیں اور پیرا میڈیکل سٹاف شامل ہیں ۔ اس کے علاوہ سعودی عرب کے مختلف حصوں سے سپیشلسٹ ڈاکٹروں کی خدمات بھی حاصل کی گئی ہیں ۔دنیا کے مختلف ملکوں سے 13لاکھ23ہزار520عازمین فریضہ حج کی ادائیگی کے لئے سعودی عرب پہنچ گئے ہیں۔مکہ گورنرریٹ کے ایک اعلیٰ عہدیدار ہاشم علی فلاحی نے بتایا ہے کہ گزشتہ ایک ماہ کے دوران حج کے اجازت نامے کے بغیر مکہ مکرمہ اور مشاعرِ مقدسہ میں داخلے کی کوشش کرنے والے ایک لاکھ90ہزار افراد کو مختلف چیک پوسٹوں پرروک کر واپس بھیجا گیا ہے ۔ ان افراد کو قید اور جرمانے کی سزائیں سنائی جائیں گی، غیر ملکی کارکنوں کو ملک بدر کیاجائیگا۔ سعودی حکام نے غیر قانونی حاجیوں کو لانے والی 48ہزار گاڑیاں بھی ضبط کر لی ہیں اور 22غیر قانونی حج کمپنیوں کو بھی سیل کر دیا ہے ۔

مزید : صفحہ آخر