واپڈا ٹاؤن کے بعد پرل سٹی کی صورت میں ایک اور میگا سکینڈل سر اٹھانے لگا

واپڈا ٹاؤن کے بعد پرل سٹی کی صورت میں ایک اور میگا سکینڈل سر اٹھانے لگا

ملتان(نمائندہ خصوصی) ایم ڈی اے نے کے افسران کی من مانیوں اور بلڈرز کے مفادات کا تحفظ کرنے کی وجہ سے واپڈا ٹاؤن فیز تھری سکینڈل کے بعد پرل سٹی کی صورت میں ملتان کا ایک اور میگا سکینڈل سامنے آنے لگا ہے نیب ملتان بیورو نے ریجنل بورڈ میں پرل سٹی میں کروڑون روپے کی بے ضابطگیوں کے الزام میں انکوائری شروع کردی معلوم ہوا ہے کہ ملتان کے موضع بکھر عاربی میں عسکری کالونی فیز ٹو کے نزدیک ہاشو گروپ کی جانب سے(بقیہ نمبر38صفحہ7پر )

2010ء ؁ میں پرل کانٹی نینٹل ہوٹل اور ہاؤسنگ سکیم متعارف کرانے کا اعلان کیا گیا جس میں ہاشو گروپ کی جانب سے میں ایلیٹ کلاس کے علاقے رہائشی منصوبے کا خاکہ پیش کیا گیا اور باور کرایا گیا کہ عرصہ تین سال میں ہوٹل اور رہائشی منصوبہ مکمل کرکے کالونی کو الاٹیز کے حوالے کردیا جائے گا ملتان اور دوسرے قریبی اضلاع کے شہری جو پہلے ہی ملتان کے پراپرٹی ڈیلرز اور ایم ڈی اے کے گٹھ جوڑ سے تنگ تھے انہوں نے ہاشو گروپ کی ساکھ کو دیکھتے ہوئے پرل سٹی میں دھڑا دھڑ مکانات کی بکنگ شروع کرا دی اور شرائط کیمطابق اقساط کی ادائیگی شروع کردی اگر کسی الاٹیز نے اپنی قسط جمع کرانے میں دیر کی تو پرل سٹی کی انتظامیہ نے اپنے قانون کیمطابق اس ممبر سے جرمانہ وصول کیا وقت گزرتا گیا ہاشو گروپ کی جانب پرل سٹی میں ترقیاتی کاموں اور مکانات کی تعمیر میں لیت و لعل سے کام لیا جانے لگا جب اس گروپ کی جانب سے دیئے ٹائم پیریڈ میں کالونی مکمل نہ ہوئی اور نہ ہی پی سی ہوٹل کا خاکہ سامنے آیا تو الاٹیز نے رستگار شروع کیا لیکن طاقتور گروپ کے سامنے الاٹیز کی آواز نقار خانے میں طوطی کی آواز ثابت ہوئی آخر کار پی سی کالونی کے ممبران نے ایم ڈی اے سے رابطہ کیا مختلف ممبران کو ایم ڈی اے مختلف حیلے بیانوں سے ٹالتا رہا اس وقت شعبہ ٹاؤن پلاننگ کے افسران جو بنیادی طور پر پی سی کالونی کے مفادات کا تحفظ کرتے رہے 4سال قبل معلوم ہوا ایم ڈی اے میں چہرے برے باقی پالیسی پرانی ہے الاٹیز کو نہ تو کالونی کا نقشہ دیا گیا اور نہ ہی اس کی فرد ملکیت کی کاپی فراہم کی گئی سائلین نے پی سی کیخلاف درخواستیں دیں تو ان کو چکر پر چکر لگوائے گئے آخر کار انہیں نیب ملتان کی صورت میں ایک امید نظر آئی جس پر انہوں نے نیب کو درخواست دی کہ پی سی کالونی میں 1کنال کا مکان 1کروڑ 50؛الج اور 10مرلے کا مکان 70لاکھ روپے میں فروخت کیا گیا لیکن اب ہاشو گروپ مقررہ وقت گزرنے کے بعد ہاؤسنگ مکمل کر رہا ہے جس پر نیب نے ریجنل بورڈ کے نوٹس لے لیا اور باقاعدہ انکوائری شروع کردی ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر