پاکستان میں نشہ کرنیوالوں کی تعداد 67 لاکھ، سب سے زیادہ پنجاب میں ہیں

پاکستان میں نشہ کرنیوالوں کی تعداد 67 لاکھ، سب سے زیادہ پنجاب میں ہیں
پاکستان میں نشہ کرنیوالوں کی تعداد 67 لاکھ، سب سے زیادہ پنجاب میں ہیں

  


اسلام آباد (ویب ڈیسک) وزارت داخلہ کی طرف سے سینٹ کو بتایا گیا ہے کہ اس وقت پاکستان میں نشہ کرنے والوں کی تعداد 67 لاکھ سے زیادہ ہے اور نشہ کرنے والوں کی عمریں 15 سال سے لے کر 64 سال تک کے درمیان ہیں۔ نشہ کرنے والوں میں خواتین بھی شامل ہیں تاہم اس جواب میں نشہ کرنے والے مردوں اور عورتوں کو الگ نہیں کیا گیا۔

جواب کے مطابق اعداد و شمار اقوام متحدہ کے منشیات اور جرائم سے متعلق ادارے کی طرف سے کئے گئے سروے میں سامنے آئے ہیں۔ نشہ کرنے والوں کی سب سے زیادہ تعداد صوبے پنجاب میں رہتی ہے اور یہ تعداد 29 لاکھ کے قریب ہے جبکہ سب سے کم تعداد بلوچستان میں دو لاکھ 80 ہزار کے قریب ہے۔ نشہ کرنے والے یہ افراد زیادہ تر ہیروئن اور چرس استعمال کرتے ہیں جبکہ انجکشن کے ذریعے نشہ کرنے والوں کی سب سے زیادہ تعداد بھی پنجاب میں ہی ہے۔ افیون کا نشہ کرنے والوں کی سب سے زیادہ تعداد صوبہ سندھ جس کی تعداد 90 ہزار سے زیادہ ہے۔ 2013ءکے بعد پاکستانی حکومت نے نشہ کرنے والے افراد کی تعداد کا سروے نہیں کیا۔

پاکستان میں سب سے زیادہ منشیات جنوبی سرحد آتی ہے جہاں افغانستان واقع ہے۔ انسداد منشیات فورس کے ملک بھر میں 29 تھانے ہیں جبکہ اس کے علاوہ ملک کے تمام ہوائی اڈوں پر بھی اے این ایف کے دفاتر قائم کئے گئے ہیں۔ اے این ایف نے ملک بھر میں منوں کے حساب سے منشیات پکڑی ہے جس کی عالمی مارکیٹ میں قیمیت اربوں ڈالر میں ہوگی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس