ڈونلڈ ٹرمپ بھی دراصل جنسی درندہ نکلا، 13 سالہ نوعمر بچی کے ساتھ کی گئی ایسی شرمناک ترین حرکت منظر عام پر آگئی کہ لوگ سن کر ہی کانوں کو ہاتھ لگانے لگیں

ڈونلڈ ٹرمپ بھی دراصل جنسی درندہ نکلا، 13 سالہ نوعمر بچی کے ساتھ کی گئی ایسی ...
ڈونلڈ ٹرمپ بھی دراصل جنسی درندہ نکلا، 13 سالہ نوعمر بچی کے ساتھ کی گئی ایسی شرمناک ترین حرکت منظر عام پر آگئی کہ لوگ سن کر ہی کانوں کو ہاتھ لگانے لگیں

  


نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی صدارتی امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ اپنی مہم کے آغاز سے ہی تنازعات کی زد میں ہیں اور اب تک درجن بھر خواتین ان کے خلاف نازیبا سلوک کی شکایت کر چکی ہیں۔ اب ایک خاتون نے ان کے خلاف جنسی زیادتی کا مقدمہ بھی درج کروا دیا ہے۔ برطانوی اخبار ڈیلی سٹارکی رپورٹ کے مطابق خاتون نے نیویارک کی عدالت میں مقدمہ درج کروایا ہے جس میں اس نے موقف اختیار کیا ہے کہ ” 1990ءکی دہائی میں ڈونلڈ ٹرمپ نے مجھے جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا تھا۔ اس وقت میری عمر صرف 13سال تھی۔ ارب پتی شخص جیفرے ایپسٹین نے ایک پارٹی کا انعقاد کیا تھا اور میں بھی اس پارٹی میں شریک تھی۔ اس دوران ڈونلڈ ٹرمپ مجھے ایک کمرے میں لے گیا اور بیڈ کے ساتھ باندھ کر زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔ اس نے مجھے کسی کو بتانے کی صورت میں قتل کی دھمکی بھی دی تھی۔“ نیویارک عدالت کے ایک عہدیدار نے اس مقدمے کی تصدیق کرتے ہوئے ڈیلی سٹار کو بتایا ہے کہ اس کیس کی سماعت 14اکتوبر کو ہو گی اور جج فیصلہ کرے گا کہ ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف دائر کی گئی یہ درخواست قابل سماعت ہے یا نہیں۔“

بھارت کے بڑے ہسپتال میں جنسی زیادتی کا انتہائی شرمناک واقعہ ،ڈاکٹر اور وارڈ بوائے نے 19سالہ مریض لڑکی کو اپنی شیطانی ہوس کا نشانہ بنا ڈالا

دوسری طرف ڈیلی سٹار سے گفتگو کرتے ہوئے ڈونلڈ ٹرمپ کے وکیل ایلن گارٹن نے خاتون کے دعوے کو مسترد کر دیا ہے۔ ایلن گارٹن کا کہنا تھا کہ ”خاتون کا الزام بے بنیاد اور انتہائی گھٹیا ہے جو صرف ڈونلڈ ٹرمپ کی الیکشن مہم کو نقصان پہنچانے کے لیے عائد کیا گیا ہے۔“واضح رہے کہ خاتون نے اپنی شناخت ظاہر نہ کرتے ہوئے اپنے وکیل کے ذریعے عدالت میں یہ درخواست دائر کی ہے۔

مزید : بین الاقوامی