یورپی ملک میں حاملہ مسلمان لڑکی کے پیٹ پر شہریوں کا لاتوں سے حملہ، خوفناک حرکت کی وجہ ایسی شرمناک کہ جان کر کسی بھی مسلمان کو غصہ آجائے

یورپی ملک میں حاملہ مسلمان لڑکی کے پیٹ پر شہریوں کا لاتوں سے حملہ، خوفناک ...
یورپی ملک میں حاملہ مسلمان لڑکی کے پیٹ پر شہریوں کا لاتوں سے حملہ، خوفناک حرکت کی وجہ ایسی شرمناک کہ جان کر کسی بھی مسلمان کو غصہ آجائے

  


بارسلونا (نیوز ڈیسک) یورپ میں باپردہ مسلمان خواتین سے اظہار نفرت تو کوئی نئی بات نہیں تھی لیکن سپین کے شہر بارسلونا میں ایک حاملہ مسلمان خاتون کو برقعہ پہننے کی جو سزا دی گئی ہے اور اس کے ساتھ جو وحشیانہ سلوک کیا گیا ہے اس کی مثال شاید ہی کہیں اور مل سکے۔

اخبار دی انڈی پینڈنٹ کی رپورٹ کے مطابق خاتون اپنے خاوند اور دو بچوں کے ساتھ جارہی تھی کہ دو نوجوان ان کے قریب آئے اور خاتون کو گالیاں بکنے لگے۔ وہ مسلسل برقعے اور سلامی کلچر کے خلاف زبان درازی کررہے تھے جس پر خاتون کے شوہر نے انہیں سمجھانے کی کوشش کی مگر وہ اپنی بدمعاشی میں حد سے آگے بڑھ گئے اور اس پر حملہ کردیا۔ جب خاتون نے اپنے خاوند کو بچانے کی کوشش کی تو ان درندہ صفت غنڈوں نے اس پر بھی حملہ کردیا اور خصوصاً اس کے پیٹ کو نشانہ بناکر مکے اور لاتیں برسانے لگے اور اسے اپنے پیروں تلے روندتے رہے۔ شاید یہ بدبخت دونوں میاں بیوی کو مار ہی ڈالتے لیکن خوش قسمتی سے آس پاس موجود کچھ لوگ مدد کو آگے بڑھے اور ان کے ظلم سے دونوں کو بچایا ۔

مزیدپڑھیں:9/11 سے ایک روز قبل امریکہ سے غائب ہونے والے 2300 ارب ڈالر کدھر گئے اور 9/11 حملوں سے اس رقم کا کیا تعلق تھا؟ تاریخ کے سب سے بڑے راز سے پردہ اُٹھ گیا، 9/11 حملوں کا پول کھل گیا

مزید دردناک بات یہ ہے کہ یہ سفاکانہ واقعہ متاثرہ میاں بیوی کے دو کمسن بچوں کے سامنے پیش آیا جو اپنے والدین کے ساتھ ہونے والے وحشیانہ سلوک کو دیکھ کر شدید سہم گئے تھے۔ بھلا ہو ان لوگوں کا کہ جنہوں نے سفاک غنڈوں سے اس جوڑے اور ان کے بچوں کو بچایا اور پولیس کو اطلاع کی۔ کچھ دیر بعد پولیس موقع پر پہنچ گئی اور بہیمانہ تشدد کا نشانہ بننے والی خاتون کو ہسپتال پہنچایا گیا جہاں اس کا علاج جاری ہے۔ پولیس نے شک کی بنا پر دو افراد کو گرفتار کیا ہے تاہم یہ واضح نہیں کہ گرفتار شدگان وہی غنڈے ہیں جنہوں نے مسلمان خاتون پر سربازار سفاکانہ حملہ کیا تھا۔

مزید : بین الاقوامی