روئی کے بھاؤمیں اتار چڑھاؤ کے بعد فی من 200روپے اضافہ ، پھٹی کی رسد بڑھ گئی

روئی کے بھاؤمیں اتار چڑھاؤ کے بعد فی من 200روپے اضافہ ، پھٹی کی رسد بڑھ گئی

 کراچی(این این آئی)مقامی کاٹن مارکیٹ میں گزشتہ ہفتہ کو عید الاضحی کی تعطیلات کے بعد منگل کو کھلنے والی کاٹن مارکیٹ میں امریکہ کے وافر مقدار میں کپاس پیدا کرنے والی ٹیکسٹائل ریاست میں زبردست طوفان اور سیلاب کے باعث کپاس کی فصل کو نقصان ہونے کی خبروں کے زیر اثر نیویارک کاٹن مارکیٹ میں روئی کے وعدے کے بھاؤ میں زبردست تیزی کی گھن گرج بین الاقوامی کپاس پیدا کرنے والے ممالک جس میں پاکستان بھی شامل ہے وہاں روئی کے بھاؤ میں اضافہ کا رجحان رہا گو کہ نیویارک وعدے کے بھاؤ میں فی پاؤنڈ 5تا 7امریکن سینٹ کا غیر معمولی اضافہ ہوکر بھاؤ 67 امریکن سینٹ سے بڑھ کر 75 امریکن سینٹ کی اونچی سطح پر پہنچ گیا جس کے زیر اثر مقامی کاٹن مارکیٹ میں ٹیکسٹائل ملز اور کپاس کے نجی برآمد کنندگان نے کپاس کی خریداری میں اضافہ کردیا۔ جس کے باعث روئی کے بھاؤ میں 150تا 200روپے اضافہ ہوگیا تھا لیکن نیویارک کاٹن کے بھاؤ میں پرافٹ ٹیکنگ کے سبب ریکشن آنے اور بین الاقوامی کپاس کے بیوپاری نے مقامی کاٹن مارکیٹ سے اونچے بھاؤ پر وافر مقدار میں روئی کے سودے کئے ہوئے تھے اس نے کپاس ان کے معیار کے مطابق نہ ہونے کی وجہ سے بیشتر سودے چھوڑ دیئے جس کی مارکیٹ میں "ڈبل سیلنگ" آنے سے بھی مارکیٹ پر دباؤ دیکھا گیا۔ صوبہ سندھ میں روئی کا بھاؤ فی من 6000تا 6150روپے پھٹی کا بھاؤ فی 49 کلو 2600تا2800روپے جبکہ صوبہ پنجاب میں روئی کا بھاؤ فی من6200تا 6300روپے پھٹی کا بھاؤ فی 40 کلو2600تا2900روپے ریکارڈ کیاگیا۔کراچی کاٹن ایسوسی ایشن کی اسپاٹ ریٹ کمیٹی نے اسپاٹ ریٹ میں فی من 200روپے کا اضافہ کرکے اسپاٹ ریٹ فی من 6100روپے کے بھاؤ پر بند کیا۔ کراچی کاٹن بروکرز فورم کے چیئرمین نسیم عثمان نے بتایا کہ امریکہ کی فلوریڈاریاست میں "ارما" نامی شدید طوفان آنے کی خبروں کی وجہ سے مارکیٹ میں تیزی کا رجحان رہا۔ آئندہ دنوں میں پھٹی کی رسد میں اضافہ ہوگا کاروباری حجم بھی بڑھے گا لیکن روئی کے بھاؤ مجموعی طورپر مستحکم رہنے کی توقع بتائی جاتی ہے۔

کیوں کہ اس بھاؤ پر ٹیکسٹائل و اسپننگ ملز کا کاٹن یارن فروخت ہورہا ہے خصوصی طور پر "ڈینم" بنانے والی ملیں وافر مقدار میں کاٹن یارن خرید رہی ہیں۔ نسیم عثمان کے مطابق ٹیکسٹائل سیکٹر میں کہا جا رہا ہے کہ حکومت ٹیکسٹائل مصنوعات کی برآمد پر 4فیصد تک ڈیبٹ دینے کا اعلان کرنے والی ہے اگر ایسا ہوا تو روئی کی مانگ میں اضافہ ہوجائیگا فی الحال کپاس کی فصل مجموعی طورپر تسلی بخش بتائی جاتی ہے۔ پیداوار ایک کروڑ 26 لاکھ گانٹھوں کے لگ بھگ ہونے کی توقع ہے۔

مزید : کامرس