شیرگڑھ میں خاتون کے اندھے قتل کا ڈراپ سین مسجد کا پیش امام قاتل نکلا

شیرگڑھ میں خاتون کے اندھے قتل کا ڈراپ سین مسجد کا پیش امام قاتل نکلا

شیرگڑھ(نامہ نگار)شیرگڑھ میں خاتون کے اندھے قتل کا ڈراپ سین مسجد کا پیش امام قاتل نکلا آلہ قتل اور خاتون کا موبائیل برآمد خاتون علاقے میں فحاشی پھیلا رہی تھی اسی وجہ سے قتل کیا ملزم کا اعتراف جرم تھانہ شیر گڑھ میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ایس ایچ او شیر گڑھ ولایت شاہ خان نے بتایا کہ 29اگست کو ہمیں قطب گڑھ خنجریان میں ایک خاتون کی لاش مل گئی جسے نا معلوم ملزمان نے جہانزیب خان کے کھیتوں میں فائرنگ کرکے قتل کیا تھا خاتون کی شناخت مسماۃ شکیلہ زوجہ محمد نبی سکنہ محلہ اکا خیل مایار مردان سے ہوئی پولیس نے ان کے گھر کو اطلاع دی ان کے شوہر محمد نبی کی رپورٹ پر نا معلوم ملزمان کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کیا اندھے قتل کا نو ٹس لیتے ہوئے ڈی پی او مردان ڈاکٹر میاں محمد سعید نے اے ایس پی تخت بھائی علی بن طارق کی نگرانی میں ایس ایچ او شیر گڑھ ولایت شا ہ کی قیادت میں سب انسپکٹر خان محمد،سب انسپکٹر عبد اللہ،انوسٹی گیشن انچارج انور خان اور ذاکر خان پر مشتمل سپیشل ٹیم تشکیل دیا جنہوں نے جدید سائنسی خطوط پر تفتیش شروع کی اور خاتون کا موبائیل ڈیٹا حاصل کیا موبائیل ڈیٹا سے معلوم ہوا کہ خاتون نے آخری رابطہ فیاض ولد محمد ایاز سکنہ سر ڈھیرئی حال خنجریان سے کیا ہے جو کہ خنجریان میں مقامی مسجد کا پیش امام ہے اس کے بعد خاتون کا موبائیل بند تھا پولیس نے فیاض کو حراست میں لیا تو تفتیش کے دوران انہوں جرم کا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ مسماۃ شکیلہ ایک فحاش عورت تھی اور علاقے میں فحاشی پھیلا رہی تھی اس لئے میں نے اسے قتل کیا انہوں نے کہا کہ تقریباََ ایک مہینے سے میرا ان سے رابطہ تھا28اگست کومیں نے اس سے رابطہ کرکے شیر گڑھ بلایا اورشیرگڑھ سے اپنے موٹر سائیکل پر بٹھاکر خنجریان میں جہانزیب خان کے کھیتوں میں لے گیا جہاں کھیتوں میں بنا یا گیاتہہ خانے میں لے گیا اور باہر آکر پستول لوڈ کرکے دوبارہ تہہ خانے گیا اور فائرنگ کرکے قتل کیاانہوں نے کہا کہ یہ میرا ذاتی فعل تھا اس جرم میں میرے ساتھ کوئی شریک نہیں تھا ایس ایچ او شیر گڑھ ولایت شاہ نے صحافیوں کو بتایا کہ یہ قتل ہمارے لئے ایک چیلنج تھا کیونکہ اس قتل سے علاقے میں خوف ،ہراس پھیل گیا تھا

مزید : کراچی صفحہ اول