پانامہ کیس کا فیصلہ ملک سے کرپشن کے خاتمہ کی ابتداء ہے :محمود خان

پانامہ کیس کا فیصلہ ملک سے کرپشن کے خاتمہ کی ابتداء ہے :محمود خان

مٹہ سے( نمائندہ پاکستان)صوبہ خیبر پختونخواہ کے صوبائی وزیر کھیل وثقافت‘میوزیم وامورنوجوانان اور پاکستان تحریک انصاف ملاکنڈ ریجن کے صدر محمود خان نے کہا کہ پانامہ کیس کے فیصلے سے ملک سے کرپشن کے خاتمے کا ابتداء ہوگئی ہے اور کرپٹ سیاستدانوں سے نجات حاصل کئے بغیر غریب عوام موجودہ استحصالی نظام سے چھٹکارہ نہیں پاسکتے عوام ایک خوشحال اور ترقی یافتہ پاکستان کے خواب کو شرمندہ تعبیر کرنے کیلئے عمران خان کے ساتھ دیں۔انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت نے نئے خیبر پختونخواہ کی بنیاد رکھ دی ہے جہاں نظام کو درست سمت پر گامزن کردیا گیا ہے اور اب تمام سرکاری ادارے عوام کوریلیف فراہم کررہے ہیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے تحصیل مٹہ سوات کے مختلف مضافات شامس دارمئی اور سخرہ پیندے میں شمولیتی اجتماعات سے خطاب کرتے ہوئے کیا جبکہ اجتماع سے تحصیل مٹہ کے نائب ناظم محمد حکیم‘ ضلعی کونسلرزخیرات محمد‘بہادر خان اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔اس موقع پر اے این پی ‘مسلم لیگ(ن) ‘پی پی پی‘قومی وطن پارٹی اور جے یوآئی کے اہم کارکنان غٹ خان‘نمیر خان‘کشور گل لالا‘ظہیر‘وقاص‘جمیر ‘سعید اللہ‘عمر واحد‘محمد عمرشیر خان عرف خاکی‘مولوی علی محمد‘فضل خالق شیر ولی‘امیر زمان‘نوشاد‘باچا‘جمعہ خان‘عمرذادہ اور دیگر نے اپنے اپنے خاندانوں سمیت سینکڑوں ساتھیوں کے ہمراہ مستعفی ہوکر پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت کا اعلان کیا۔صوبائی وزیر محمود خان نے پی ٹی آئی میں شمولیت اختیار کرنے والوں کو خوش آمدید دیتے ہوئے کہاکہ ماضی کے حکمرانوں نے ملک کی ترقی اور عوام کی فلاح وبہبود کیلئے کچھ کرتے تو آج ہم بھی ترقی یافتہ ممالک کے صفوں میں کھڑے ہوتے۔انہوں نے مخالفین کو ایک بار پھر مناظرے کا چیلنج دیتے ہوئے کہا کہ وہ اپنے دور اور ہمارے دور کے ترقیاتی کاموں کو موازنہ کریں تو ان کو خود بخود اندازہ ہوجائیگا۔محمود خان نے کہا کہ پی ٹی آئی کے صوبائی حکومت وزیر اعلیٰ پرویز خٹک کے قیادت میں صوبے کے تمام دستیاب وسائل غریب عوام پر خرچ کررہی ہے۔انہوں نے کہا کہ سی پیک صوبے کامستقبل بنائے گا اورپورے صوبے میں صنعتی زون بنیں گے ۔چین کے چھوٹے اور بڑے سرمایہ کار صوبے کا رخ کررہے ہیں جس سے معاشی ترقی کا انقلاب برپا ہوگا اور صوبے میں بے روزگاری کا خاتمہ ہوجائیگا۔انہوں نے مذید کہا کہ یہاں پر میرٹ پر مبنی نظام قائم ہے اورلوگ اپنے قابلیت پر آگے آرہے ہیں۔ہمارے بنائے گئے نظام میں ذاتی پسند ونا پسند کی کوئی گنجائش نہیں۔محمود خان نے کہا کہ ماضی میں ہر کام پر پیسے مانگے جاتے تھے کرپشن اور کمیشن کلچر عام تھی ہم نے مثالی حکمرانی کے ذریعے تمام خرافات ختم کردی۔انہوں نے کہا کہ نجی سود کے خاتمے کا اختیار ہمارے ساتھ تھا ہم نے اس کے خلاف قانون سازی کرکے اپنے فرائض پورا کردیاہے۔انہوں نے کہا کہ اسلام کے نام ونہاد ٹھیکہ داروں نے اپنے پانچ سالہ اقتدار میں اسلامی قوانین کے نفاذکیلئے کچھ نہیں کیا اور صرف اپنے جیبیں بھرنے میں مصروف رہے۔انہوں نے کہا کہ پختونوں کو جتنا نقصان پختون کے حقوق کے علمبرداروں اور ان کے لیڈروں نے پہنچایا اتنا ذاتی دشمنوں نہیں دیا۔انہوں نے کہا کہ پختون قوم اپنے نام ونہاد لیڈروں کے کرتوتوں پر شرمندہ ہیں انہوں نے اپنے دور میں پختونوں کے نام پر عوام کو لوٹنے میں امتیاز نہیں کیا۔محمود خان نے کہا کہ صوبے میں تبدیلی محسوس نہ کرنے والے اپنے آنکھوں کا علاج کرائیں۔محمود خان نے علاقے میں ترقیاتی کاموں کاذکر کرتے ہوئے کہا کہ صرف یونین کونسل دارمئی اور سخرہ میں اربوں روپے کی لاگت سے مختلف ترقیاتی منصوبوں کا جھال بچھا دیا گیا ہے۔جس سے علاقہ کے سابقہ محرومیوں کے آزالہ ہونے کے ساتھ ساتھ عوام کی مسائل ومشکلات بھی حل ہوگئے ہیں۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر