دہشت گردی کے 9مقدمات کی سماعت بغیر کسی کارروائی کے آئندہ تاریخ پیشی تک ملتوی

دہشت گردی کے 9مقدمات کی سماعت بغیر کسی کارروائی کے آئندہ تاریخ پیشی تک ملتوی

راولپنڈی(جنرل رپورٹر) انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت کے جج اصغر خان کے رخصت پر ہونے کے باعث سابق صوبائی وزیر راجہ محمد بشارت کے بھانجے کو قتل کرنے کے مقدمے سمیت دہشت گردی کے 9مقدمات کی سماعت بغیر کسی کارروائی کے آئندہ تاریخ پیشی تک ملتوی کر دی ہے۔ تھانہ سی ٹی ڈی میں درج قتل کے مقدمے میں ملوث ملزم عرفان کیس کی سماعت 18ستمبر، اسی تھانے میں درج مذہبی منافرت پھیلانے کے مقدمے میں ملوث ملزم شکیل کیس کی سماعت 15ستمبر ، بارود برآمد ہونے کے مقدمے میں ملوث ملزم غلام قاسم کیس کی سماعت 21ستمبر ، عرفان کیس کی سماعت 23ستمبر اورامجد کیس کی سماعت 21ستمبر تک ملتوی کر دی ہے، تھانہ نیوٹاؤن میں درج قتل کے مقدمے میں ملوث ملزم زاہد خان کیس کی سماعت 21ستمبر،تھانہ للا جہلم میں درج قتل کے مقدمے میں ملوث ملزم تنویر کیس کی سماعت 23ستمبر، تھانہ گوجر خان میں درج قتل کے مقدمے میں ملوث ملزم علیم کیس کی سماعت 16ستمبر جب کہ تھانہ صدر بیرونی میں درج بلدیاتی انتخابات کے موقع پر فائرنگ کرکے سابق صوبائی وزیر محمد بشارت راجہ کے بھانجے سعیب کو موت کے گھاٹ اتارنے کے مقدمے میں ملوث ملزمان نمبر دار اخلاق وغیرہ کیس کی سماعت 16ستمبر تک ملتوی کر دی ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر