اطالوی پولیس پر 2 امریکی طالبات کی عصمت دری کا الزام

اطالوی پولیس پر 2 امریکی طالبات کی عصمت دری کا الزام
اطالوی پولیس پر 2 امریکی طالبات کی عصمت دری کا الزام

  

روم ( آن لائن )اٹلی کی خاتون وزیر دفاع نے اعتراف کیا ہے کہ فلورنس شہر میں پولیس اہلکاروں نے مبینہ طور پر 2امریکی طالبات کی آبرو ریزی کی تھی۔

ا لجزائر میں پہلی مرتبہ درسی کتب بسم اللہ کی عبارت سے خالی،ہنگامہ برپا

غیر ملکی میڈیا کے مطابق فلورنس شہر میں ایک نائیٹ کلب کے باہر مختلف لوگوں میں ہونے والی ہاتھا پائی کے بعد پولیس طلب کی گئی تھی۔ دونوں امریکی طالبات نے تفتیش کاروں کو بتایا کہ پولیس نے نائٹ کلب کے باہر سے انہیں پکڑا اور ایک پولیس کے اہلکار کی رہائشی عمارت میں لے گئے جہاں پولیس اہلکاروں نے دونوں کی آبرو ریزی کی جس کے بعد انہیں چھوڑ دیا گیا۔دوسری جانب وزیر دفاع روبرٹا بینوٹی کا کہنا ہے کہ ’کارا بینییری‘ پولیس فورس پر 2 امریکی طالبات کے ریپ کے الزام میں کافی حد تک صداقت ہے جبکہ اعلیٰ حکام اس واقعے کی باریک بینی سے تحقیق کررہے ہیں اوراگر یہ الزام درست ثابت ہوتا ہے تو یہ پولیس اہلکاروں کا ایک شرمناک سکینڈل ہوگا جس پرانہیں سخت سزا ہوسکتی ہے۔

واضح رہے کہ 7 ستمبر کو 2 امریکی طالبات جن کی عمریں 19 اور 21 سال ہیں نے فلورینس کے ایک پولیس سٹیشن میں سکیورٹی اہلکاروں کی جانب سے ریپ کا نشانہ بنائے جانے کا دعویٰ کیاتھا، تاہم پولیس اہلکار اس الزام کی سختی سے تردید کرتے ہیں۔

مزید : بین الاقوامی