فلپائن، باغیوں نے معاہدے کے تحت ہتھیار ڈالنا شروع کردئیے

فلپائن، باغیوں نے معاہدے کے تحت ہتھیار ڈالنا شروع کردئیے

  



منیلا (این این آئی)فلپائن کے جنوبی صوبوں میں واقع مسلمان باغیوں نے کئی دہائیوں سے جاری جنگ کے خاتمے سے متعلق معاہدے کے تحت آزاد غیر ملکی مبصرین کی موجودگی میں ہتھیار ڈالنے کا آغاز کردیا۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق فلپائن کے جنوبی علاقے میں ایک ہزار سے زائد جنگجوؤں نے ملک کی سب سے بڑی باغی قوت کو سیاسی جماعت میں تبدیل کرنے کے مقصد کے تحت ایک روز میں 940 ہتھیار واپس کردئیے۔ مورو اسلامک لبریشن فرنٹ(ایم آئی ایل ایف) فائٹرز نامی تنظیم کو گزشتہ روز تحلیل کیا گیا تھا جو کہ تنظیم نے اپنے خیالات سے واپسی کی جانب پہلے علامتی قدم کے طور پر اٹھایا ہے۔70 کی دہائی کے بعد سے اب تک حکومتی سیکیورٹی فورسز کے ساتھ 100 سے زائد جنگیں لڑنے والے باغی فیصل عبداللہ نے کہا کہ جنگ ختم ہوچکی، میرے پاس کوئی ہتھیار باقی نہیں بچے۔تاہم ہتھیار ڈالنے کے عمل کو اس علاقے میں اثر انداز ہونے میں وقت لگے گا جہاں تشدد کا خطرہ موجود ہے۔

مزید : علاقائی


loading...