غیر ملکی قرضوں سے نجات کیلئے قوم ساتھ دے،حاجی محمد اصغر

غیر ملکی قرضوں سے نجات کیلئے قوم ساتھ دے،حاجی محمد اصغر

  



فیصل آباد(آن لائن)فیصل آبادچیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے ا یگزیکٹو ممبر و چیئرمین قائمہ کمیٹی برائے کسٹم انیڈ ڈرائی پورٹ حاجی محمد اصغر نے کہا ہے کہ پاکستان کوغیر ملکی قرضوں سے نجات کیلئے قوم کو نئی حکومت کا ساتھ دینا ہوگا، ملک اس وقت شدید مالی بحران کا شکار ہے، حکومت ریونیو میں اضافہ کیلئے نئے ٹیکس پیئر تلاش کریں، سابق حکومت کی منفی پالیسیوں کی وجہ سے قیمتی زرمبادلہ کمانے اور لوگوں کو بڑے پیمانے پر روزگار مہیا کرنے والا یہ سیکٹر بحران کا شکار ہو گیا۔ اس سے ملکی معیشت پر منفی اثرات مرتب ہوئے اور ٹیکسٹائل کی برآمدات بتدریج کم ہونا شروع ہو گئیں اور اب پاکستان ٹیکسٹائل کی برآمدات سے 26 ارب ڈالر کی بجائے صرف 18 ارب ڈالر کما رہا ہے وزیر اعظم عمران خان ملک کومشکل حالات سے نکالنے میں کامیاب ہوجائیں گے۔ حاجی محمد اصغر نے وفاقی حکومت کی طرف سے کرپشن کے خلاف اور لوٹی ہوئی دولت کے لئے ریکوری یونٹ کے قیام پر خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ حکومت اور سپریم کورٹ کا لوٹی ہوئی دولت واپس لانے کا عزم خوش آئندہ ہے۔

حکومت اپنے 100 روزہ پلان پر عمل درآمد کے لئے پر عزم ہے۔ سفارش‘ کرپشن اور کمیشن کا دور گزر چکا ہے اب صرف میرٹ پر تمام امور آگے بڑھیں گے ۔ انہوں نے حکومت او ر اسکے معاشی پالیسی سازوں پر زور دیا کہ وہ ریونیو میں اضافہ کیلئے پہلے سے ایمانداری سے ٹیکس ادا کرنے والوں پر ٹیکسوں کامزید بوجھ ڈالنے کی بجائے نئے ٹیکس پیئر تلاش کریں ، ملک میں کاروبار کیلئے موافق حالات پیدا کئے جائیں اور بے جا ٹیکسوں سے بچا جائے بصور ت دیگر ٹیکسوں اور ریگولیٹری ڈیوٹیز میں اضافہ نہ صرف حکومت کو محصولات سے محروم کردیگا بلکہ سمگلنگ کے نئے دروازے بھی کھل جائینگے۔ انہوں نے کہا کہ حکومتی اقتصادی،مالیاتی اور معاشی پالیسیاں عوام کی امیدوں سے مطابقت رکھیں گی تو انکے مثبت اثرات بھی جلد سامنے آئینگے ریگولیٹری ڈیوٹی میں اضافہ قوم کیلئے مہنگائی بم ثابت ہوگا اور بلبلا اٹھیں گے۔

مزید : کامرس


loading...