2020ء تک پولٹری گوشت کا سالانہ استعمال فی کس 26کلو گوشت گرام تک ہو گا 

     2020ء تک پولٹری گوشت کا سالانہ استعمال فی کس 26کلو گوشت گرام تک ہو گا 

لاہور (لیڈی رپورٹر) ملک میں پولٹری کی صنعت سالانہ 8 تا 10 فیصد کی شرح سے ترقی کر رہی ہے۔ 2020ء تک ملک میں پولٹری گوشت کا فی کس سالانہ استعمال بڑھ کر 26 کلوگرام تک پہنچ جائے گا جو 1993ء میں 16 کلوگرام تھا۔لائیو سٹاک ماہرین کے مطابق ملک میں برائلر مرغیوں کی پیداوار 962 ملین مرغیاں رہی ہے جس سے 1.15 ارب ٹن مرغی کا گوشت حاصل کیا گیا۔ملک میں گوشت کی مجموعی پیداوار میں برائلر مرغی کے گوشت کا حصہ 28 فیصد رہا ہے۔ رپورٹ کے مطابق مرغی کا گوشت غذائی ضروریات کی تکمیل میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔ پولٹری کی صنعت کی سالانہ شرح نمو 8 تا 10 فیصد ہے جس کی ترقی سے نہ صرف مقامی سطح پر غذائی تحفظ کو یقینی بنایا جا سکتا ہے بلکہ مرغی کے گوشت سے تیار مصنوعات کی برآمدات کے فروغ سے قیمتی زرمبادلہ بھی کمایا جا سکتا ہے۔

مزید : کامرس


loading...