نوجوان کشمیری گلوکار کو گھر سے نکال دیا گیا

نوجوان کشمیری گلوکار کو گھر سے نکال دیا گیا
نوجوان کشمیری گلوکار کو گھر سے نکال دیا گیا

  


ممبئی(ویب ڈیسک) بھارت میں نوجوان کشمیری گلوکار کو مالک مکان نے وادی سے واپسی پر گھر میں داخل ہونے نہیں دیا اور واپس کشمیر جانے کا کہہ دیا۔بھارتی میڈیا کے مطابق کشمیری گلوکار عادل گریزی مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم ہونے کے روز 5 اگست کو جنت نظیر وادی کے ضلع باندی پورہ میں اپنے گھر تعطیلات پر آیا ہوا تھا تاہم ایک ماہ تک اسے واپس ممبئی جانے نہیں دیا گیا۔عادل گریزی جیسے تیسے 5 ستمبر کو ممبئی میں اپنے گھر پہنچ گیا جہاں اسے کئی پروجیکٹس پر کام کرنا تھا تاہم مالک مکان نے نوجوان گلوکار کو گھر میں داخل ہونے سے روک دیا اور سامان واپس کرنے کے بجائے الٹا دھمکیاں دیں۔کشمیری نوجوان کو مالک مکان کے رویے پر تھانے سے مدد طلب کرنا پڑی جس پر پولیس نے مالک مکان سے بات کرکے نیا گھر ملنے تک گلوکار کو رہنے کی اجازت دے دی تاہم گلوکار کا کہنا ہے کہ گھر کرائے پر دینا تو دور کوئی مجھ سے بات کرنے کے لیے تیار نہیں۔مقبوضہ کشمیر میں مودی سرکار کے غیر آئینی اقدام اور نفرت آمیز پالیسی کے باعث معصوم کشمیریوں کی نہ صرف ان کی اپنے علاقے بلکہ بھارت میں بھی زندگی اجیرن ہوگئی ہے اور نام نہاد سیکولر ریاست میں کشمیری طلبا، تاجر اور رہائشیوں کی جانیں محفوظ نہیں۔

مزید : انسانی حقوق


loading...