ابو ظہبی میں نواز شریف کے منت ترلے کئے گئے ، حفیظ اللہ نیازی کا دعویٰ

ابو ظہبی میں نواز شریف کے منت ترلے کئے گئے ، حفیظ اللہ نیازی کا دعویٰ
ابو ظہبی میں نواز شریف کے منت ترلے کئے گئے ، حفیظ اللہ نیازی کا دعویٰ

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) تجزیہ کار حفیظ اللہ نیازی نے کہاہے کہ ابو ظہبی میں نواز شریف کے منت ترلے کئے گئے کہ ملک سے باہر رہیں اور آرام سے زندگی گزاریں لیکن نواز شریف نے انکار کیا اور بیٹی کے ساتھ سیدھے جیل آئے ۔

جیونیوز کے پروگرام ”رپورٹ کارڈ“میں گفتگو کرتے ہوئے حفیظ اللہ نیازی نے کہا کہ جہاں تک ڈیل کا تعلق ہے تو گفت و شنید کے بارے میں تو ملک کے گلی کوچے میں سب کومعلوم ہے ۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف کوجب سزا ہوئی تو ان کولندن میں بھی روکنے کی کوشش کی گئی اور ابو ظہبی میں بھی ان کے منت ترلے کئے گئے کہ ملک سے باہر رہیں اور آرام سے زندگی گزاریں لیکن نواز شریف نے اس وقت بھی انکار کیا اور بیٹی کے ساتھ سیدھے جیل آئے ۔

انہوں نے کہا کہ نواز شریف کو جب کلثوم نواز کی وفات پر پیرول پر باہر نکالا گیا تواس وقت بھی یہ کہاگیا کہ نواز شریف جب باہر ہونگے تو ان سے بات کرنے میں آسانی ہوگی لیکن نواز شریف نے پھر بھی کوئی معاملہ نہیں کیا ۔ ان کا کہنا تھا کہ جس جج کی وجہ سے سپریم کورٹ کا سر شرم سے جھک گیا ، اس نے استعفیٰ نہیں دیا ۔انہوں نے کہا کہ جج کی ویڈیو نواز شریف نے تو نہیں بنائی تھی جن پر ویڈیو بنانے کا الزام تھا ، ان کو تو بری کردیا گیاہے ۔ان کا کہناتھا کہ جس جج کے کنڈکٹ سے سپریم کورٹ کے ججوں کے سر شرم سے جھک جائیں ، اس جج کے فیصلے کی حیثیت میری سمجھ سے بالا تر ہے ۔

مزید : قومی


loading...