پاکستان میں ڈریس ڈیزائننگ کابہت سکوپ ہے، بینش 

   پاکستان میں ڈریس ڈیزائننگ کابہت سکوپ ہے، بینش 

  

لاہور (فلم رپورٹر)پاکستان میں ڈریس ڈیزائننگ کا سکوپ بہت زیادہ ہے اس لیئے سرکاری سطح پر پذیرائی دی جائے ان خیالات کا اظہار بی اے ڈیزائنرز کی چیف ایگزیکٹو معروف ڈیزائنر بینش عابد نے ایک ملاقات کے دوران کیا۔بینش عابد کا کہناتھا کہ اس وقت پاکستان میں بہت سارے نوجوان ڈیزائنرز اچھا کام کررہے ہیں مگر وسائل کی کمی اور مناسب پلیٹ فارم نہ ملنے سے سامنے نہیں آپارہے۔بینش عابد نے حکومت سے مطالبہ کرتے ہوئے کہاکہ اس وقت ڈیزائنرز اپنی مدد آپ کے تحت اپنے تیار کردہ ڈیزائنز کو سامنے لارہے ہیں او ربوتیک بنا کر اسے ڈسپلے کررہے ہیں ان کے پاس مناسب وسائل نہ ہونے کی وجہ سے وہ بین الاقوامی سطح پر اسے لانچ نہیں کر پارہے۔

 جس وجہ سے ان کا ٹیلنٹ اور ہنر ماند پڑتا جارہاہے اس لیئے حکومت اس طرف توجہ دے اور مجھ سمیت ان سب ڈیزائنرز کے لئے  ایک پلیٹ فارم بنایا جائے جس سے وہ اپنے ڈیزائن کردہ ملبوسات لانچ کرسکیں اور ان کی بہتر انداز میں مارکیٹنگ کرکے اپنے مالی مسائل کا خاتمہ کرسکیں بینش عابد نے مذید کہاکہ انٹرنیشنل ڈیزائنرز اس موقع سے فائدہ اٹھا رہے ہیں اور اپنے مہنگے ترین ملبوسات پاکستان میں بیچ کر پیسہ اکٹھا کررہے ہیں اگر یہی موقع مقامی ڈیزائنرزکو دیا جائے تو اس سے ایک تو مقامی ہنرمندوں اور ڈیزائنرز کو روزگار مہیا ہوگا دوسرا پاکستانی مصنوعات کی بھی عالمی سطح پر مانگ بڑھ سکتی ہے۔بینش عابد اس وقت اسلام آباد میں اپنی مدد آپ کے تحت اپنا ڈیزائن کردہ بوتیک جاری رکھے ہوئے ہیں۔ 

مزید :

کلچر -