ایم ایم بی ایش پروفیشنل امتحانات کیخلاف پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ

 ایم ایم بی ایش پروفیشنل امتحانات کیخلاف پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاجی ...

  

پشاور (سٹی رپورٹر)خیبر پختونخوا کے مختلف سرکاری اور نجی میڈیکل کالجز کے طلبہ نے 20اکتوبر  سے شروع ہونیوالے ایم ایم بی ایش پروفیشنل امتحانات کے خلاف پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے امتحانات کو ملتوی کیا جائے طلبہ نے ہاتھوں مین پلے کارڈز اور بینرز اٹھا رکھے تھے جس پر انکے حق میں مطالبات درج تھے  اس موقع پر میڈیکل اور ڈینٹل کالجز کے طلبہ کا کہنا تھا  کہ  وہ 6 مہینے سے گھروں پر رہے  اس دوران کوئی پریکٹیکل کام بھی  نہیں کر سکے  جبکہ  پچاس  فیصد ان لائن کلاسز بھی نہیں لے سکے ہیں اور قبائلی اضلاع کے طلبہ کیساتھ انٹرنیٹ کی سہولت تک نہیں تھی  طلبہ کے مطابق کے ایم یو نے 22 اکتوبر سے فرسٹ پروفیشنل امتحان کا شیڈول جاری کیا ہے  جبکہ دیگر صوبوں میں ایم بی بی ایس پروفیشنل امتحانات جنوری 2021 میں منعقد ہورہے ہیں انہوں نے مطالبہ کیا کہ وائس چانسلر کے ایم یو پروفیشنل امتحان دسمبر تک موخر کرکے طلبہ کو تیاری اور پریکٹیکل کام کرنے کا موقع دیں، طلبہ کے مطابق پی ایم ڈی سی کے اعلامیہ کے مطابق پرائیویٹ میڈیکل کالجزمختلف مدات میں ایک طالبعلم سے سالانہ 9 لاکھ 50 روپے فیس لینگے تاہم بعض میڈیکل کالجز طلبہ سے مقررہ فیس کے علاوہ 1 لاکھ روپے ہاسٹل فیس لے رہے ہیں پی ایم ڈی سی اور متعلقہ ادارے نوٹس لیکر طلبہ کے ساتھ ہونے والی زیادتی کو روکیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -