محکمہ خارجہ کی جانب سے خارجہ پالیسی کی خلاف ورزی، من پسند آفیسرز کو ’پُرکشش‘ ممالک میں تعینات کردیا

محکمہ خارجہ کی جانب سے خارجہ پالیسی کی خلاف ورزی، من پسند آفیسرز کو ...
محکمہ خارجہ کی جانب سے خارجہ پالیسی کی خلاف ورزی، من پسند آفیسرز کو ’پُرکشش‘ ممالک میں تعینات کردیا

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) وزارت خارجہ کی طرف سے اپنی ہی بنائی خارجہ پالیسی کی سنگین خلاف ورزیوں کا انکشاف۔ ویب سائٹ ’پروپاکستانی‘ کے مطابق فارن سروسز کے ایک سینئر افسر نے وزارت خارجہ کو ایک خط لکھا ہے جس میں وزارت کی طرف سے خارجہ پالیسی کی ان خلاف ورزیوں کا پردہ چاک کیا گیا ہے۔ ذرائع کے مطابق اس افسر نے اپنے خط میں خارجہ پالیسی کی لگ بھگ 25خلاف ورزیاں گنوائی ہیں۔ 

اس افسر نے خط میں خارجہ پالیسی کی شق 2ایف کی خلاف ورزیاں بیان کرتے ہوئے لکھا ہے کہ اس شق کے تحت کسی ایک افسر کا ایک اے کیٹیگری سٹیشن سے کسی دوسرے اے کیٹیگری سٹیشن پر تبادلہ نہیں ہو سکتا۔ چنانچہ اس شق کی خلاف ورزی کرتے ہوئے حسن محمد ربانی کو لندن سے واشنگٹن، صائمہ سلیم کو جنیوا سے اقوام متحدہ(نیویارک)، زمان مہدی کو واشنگٹن سے جنیوا، سید مصطفی ربانی کو لندن سے برمنگھم، ایزاز خان کو ہیگ سے برسلز، زین العابدین کو ڈنمارک سے کنبرا، امتیاز فیروز گوندل کو میڈرڈ سے ابوظہبی، ڈاکٹر فریحہ بگٹی کو جنیوا سے لندن، عمار امین کو پیرس سے کنبرا، گل قیصر کو اقوام متحدہ (نیویارک)سے ٹوکیو اور ڈاکٹر فیصل عزیز کو ابوظہبی سے لندن منتقل کیا گیا ہے۔ 

اسی طرح عمر صدیقی کی انقرہ پوسٹنگ کی گئی ہے حالانکہ وہ اسی سٹیشن پر اپنی چار سالہ سروس پہلے بھی مکمل کر چکے ہیں۔ افسر نے خط میں مزید بیان کیا ہے کہ وزارت خارجہ کی طرف سے خارجہ پالیسی کی شق 2آئی کی خلاف ورزی کرتے ہوئے تنویر احمد، عرفان محمود اور سیف اللہ خان کا نیپال، پیرس اور کابل تقرر کیا گیا ہے، حالانکہ شق 2آئی کے تحت ان افسران کی مسلسل تیسری بار پوسٹنگ نہیں ہو سکتی۔میاں عاطف شریف اور شعیب سرور اپنی مدت پوری ہونے کے باوجود کوالالمپور اور لاس اینجلس میں تعینات ہیں جو کہ شق 2کے (K)اور شق 2جے (J)کی خلاف ورزی ہے۔

اسی طرح شق 2بی اور شق 3آئی کی خلاف ورزی کرتے ہوئے جونیئر آفیسرز احسان کریم اور عمیر خالد کی پیرس پوسٹنگ کی گئی ہے حالانکہ ان کے بیچ کے زیادہ تر لوگ ابھی لینگوئج کورس کا انتظار کر رہے ہیں۔اس افسر نے اپنے خط میں اسی طرح کی مزید کئی خلاف ورزیاں گنواتے ہوئے کہا ہے کہ وزارت خارجہ کی طرف سے منظور نظر لوگوں کو نوازا جا رہا ہے اور انہیں خارجہ پالیسی کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ان کے من پسند سٹیشنز پر تعینات کیا جا رہاہے۔ 

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -