قیدی خواتین کے ساتھ داعش کا دل دہلا دینے والا سلوک ، رہائی پانے والی خواتین نے بتا دیا

قیدی خواتین کے ساتھ داعش کا دل دہلا دینے والا سلوک ، رہائی پانے والی خواتین ...
قیدی خواتین کے ساتھ داعش کا دل دہلا دینے والا سلوک ، رہائی پانے والی خواتین نے بتا دیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

بغداد (نیوز ڈیسک) رواں ہفتے کے آغاز میں داعش نے اغوا کی گئی یزیدی مذہب کی 200 خواتین اور لڑکیوں کو رہا کیا تو ان مظلوموں کے انکشافات نے سننے والوں کے دل دہلا دئے۔
یہ خواتین اور لڑکیاں ان سینکڑوں مغویان میں شامل تھیں جنہیں داعش نے عراق کے شمالی علاقے سنجار سے اغوا کیا تھا اور انہیں تقریباً 8 ماہ تک بدترین جنسی مظالم کا نشانہ بنایا گیا تھا۔ خواتین اور لڑکیوں نے انکشاف کیا ہے کہ انہیں مہینوں تک داعش کے جنگجو ایک دوسرے کے ہاتھ فروخت کرتے رہے جبکہ تشدد اور گینگ ریپ روز کا معمول تھا۔ خواتین اور حتیٰ کہ نوعمر لڑکیوں کو بھی عوامی مقامات پر بیک وقت کئی کئی افراد گینگ ریپ کا نشانہ بناتے رہے۔ مغربی میڈیا میں یہ انکشافات یزیدی خواتین اور بچوں کے لئے کام کرنے والے ایک ادارے سے تعلق رکھنے والے زیاد شاموخلف نے کئے ہیں۔

رقاصہ کے فحش ڈانس نے بین الاقوامی تقریب میں ہنگامہ کھڑا کردیا،عرب ملک میں پھوٹ پڑ گئی
واضح رہے کہ یزیدی خواتین اور نوعمر لڑکیوں پر کئے جانے والے جنسی مظالم کے بارے میں بین الاقوامی ادارہ ایمنسٹی انٹرنیشنل بھی نومبر 2014ءمیں 87 صفحات پر مشتمل تفصیلی رپورٹ شائع کرچکا ہے اور حالیہ انکشافات اس رپورٹ کے مندرجات کی تصدیق کرتے ہیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -