حکومت ٹیکس نظام میں اصلاحات لائے ، صدرر اولپنڈی چیمبر

حکومت ٹیکس نظام میں اصلاحات لائے ، صدرر اولپنڈی چیمبر

  

راولپنڈی (کامرس ڈیسک) وزارت خزانہ خاص طور پر فیڈرل بورڈ آف ریونیو ٹیکس نظام میں اصلاحات لائے اورٹیکس نیٹ میں اضافہ کرے پچھلے تین سال میں محصولات کی مد میں باسٹھ فی صد اضافہ ہوا ہے ٹیکس دینے والوں کیلیے مراعات دی جائیں اور اعزازات سے نواز جائے ہر سال دس اپریل کو ٹیکس ڈے منایا جاتا ہے لیکن دیکھا گیا ہے کہ ایف بی آر یا وزارت خزانہ کی جانب سے ٹیکس گزاروں کی حوصلہ افزائی کے لیے کو ئی تقریب نہیں رکھی جاتی اور نا ہی تشہیر کی جاتی ہے ان خیالات کا اظہار راولپنڈی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدرراجہ عامر اقبال نے چیمبر میں تاجروں کے ایک اجلاس سے گفتگو کرتے ہوئے کیا صدر راولپنڈی چیمبر نے تجاویز دیتے ہوئے کہا کہ جوفائلر ہو اس کے لیے ایئر پورٹ، شناختی کارڈ، پاسپورٹ آفس، بنک ڈاکخانہ وغیرہ میں الگ سے کاونٹر مختص کیا جائے ہوٹل، ایئر ٹکٹ، ہسپتال، کالج یونیورسٹی میں ڈسکاونٹ دیا جائے انہوں نے مطالبہ کیا کہ نئے ٹیکس گزاروں کو ٹیکس نیٹ میں لانے کے لیے مزید مراعات دی جائیں ٹیکس گزاروں کی عزت نفس کا خیال رکھا جائے اور ٹیکس وصولی کے نام پر انہیں ہراساں نہ کیا جائے انہوں نے یہ بھی مطالبہ کیا کہ سیلز ٹیکس کی شرح کم کی جائے پڑوسی ممالک کے مقابلے میں پاکستان میں سیلز ٹیکس کی شرح بہت زیادہ ہے یہ17فی صد ہے اس کو کم کر کے سنگل ڈیجٹ تک لایا جا ئے راجہ عامر اقبال نے کہا کہ مقامی صنعت کے فروغ کے لیے ٹیکسوں اور کسٹم ڈیوٹی میں غیر ضروری سلیب ختم کیے جائیں اجلاس میں سینئر نائب صدر راشد وائیں، نائب صدر عاصم ملک، سابق صدر میاں ہمایوں پرویز، مجلس عاملہ کے اراکین، اور چیمبر ممبران بھی موجود تھے۔

مزید :

کامرس -