8ویں جماعت کی کتابیں مارکیٹ میں 50 فیصد تک شارٹ ہیں،مہرین

8ویں جماعت کی کتابیں مارکیٹ میں 50 فیصد تک شارٹ ہیں،مہرین

  

لاہور(پ ر)سابق وزیر مملکت انصاف و پارلیمانی امور مہرین انو ر راجہ نے کہا ہے کہ پنجاب ٹیکسٹ بک بورڈ کی آؤٹ آف سورس نصابی کتب نایاب ہونے سے جعلی کتب کی مارکیٹ میں فروخت کا انکشاف ہوا ہے پنجاب ٹیکسٹ بک بورڈ اینڈ کریکولم اتھارٹی کی جانب سے جماعت اول سے 8ویں جماعت کی کتابیں مارکیٹ میں 50 فیصد تک شارٹ ہیں جس کے باعث والدین اور طلبہ سمیت بک سنٹرز کے مالکان کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے گزشتہ دنوں نویں جماعت کت مضمون ریاضی کی جعلی کتب پا ایف آئی اے نے چھاپا مارا تھا مگر ٹیکسٹ بک بورڈکی جانب سے جعلی کتب والوں کو نظر انداز کیا جا رہا ہے انہوں نے کہا کہ ملک میں جعلی کتب کا کاروبار عروج پر ہے اور حکومت کی طرف سے اس معاملے میں کوئی پیش رفت دکھائی نہیں دے رہی ہے یہ پنجا ب حکومت کی نااہلی ہے اور اس بات کو حکومت تسلیم کر لے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -