حکومت بے سہارا بچوں کو مفید شہری بنانے کیلئے کوشاں ہے :اسد قیصر

حکومت بے سہارا بچوں کو مفید شہری بنانے کیلئے کوشاں ہے :اسد قیصر

  

پشاور( سٹاف رپورٹر)سپیکرخیبر پختونخوا اسمبلی اسد قیصر نے کہا کہ حکومت بے سہارا اور بے گھر بچوں کی گورنمنٹ ماڈل انسٹیٹیوٹ چلڈرن ''زمونگ کور''کو روشن مستقبل فراہم کرنے اور انہیں معاشرے کا مفید اور کار آمد شہر ی بنانے کیلئے تمام تروسائل بروئے کار لارہی ہے ۔چائلڈ پروٹیکشن قوانین میں ترامیم کرکے بچوں سے جبری مشقت اور چائلڈ لیبر کو نہ صرف جرم قراردیا جائے گا بلکہ ایسے افراد کو کڑی سزائیں بھی دی جائیں گی ۔وہ پیر کے روز پشاور میں یتیم اور بے سہارا بچوں کیلئے قائم ادارے ''زمونگ کور ''کے دورے کے موقع پر میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کررہے تھے ۔اس موقع پرصدر برٹش پختون ایسوسی ایشن وٹرسٹی العین انٹرنیشنل اور مسلم ہینڈ برطانیہ کے صدر فضل ربی کی سربراہی میں برطانیہ کے مختلف فلاحی اورتعلیمی اداروں کے نمائندوں پر مشتمل دس رکنی وفد بھی سپیکر کے ہمراہ تھا ۔ اس موقع پر زمونگ کور کے چیف ایگزیکٹیومیجرریٹائرڈ حارث خٹک نے مہمانوں کو زمونگ کور کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ یہ ادارہ پاکستان کی تاریخ میں جدید طرز کا واحد ادارہ ہے جو خیبر پختونخوا حکومت کا بے سہارا اور یتیم بچوں کو معاشرے کے دیگر بچوں کی طرح ان کا جائزہ مقام دلانے اور احساس محرومی کے خاتمے کیلئے جدید سہولیات اور گھریلوماحول پر مشتمل ادارہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ زمونگ کور میں بے سہارا اور یتیم بچوں کو ایک چھت تلے صحت ،تعلیم ،کھیل وتفریح سمیت وہ تمام سہو لیا ت فراہم کی جارہی ہیں جومعاشرے کے دیگر بچوں کو حاصل ہیں ۔انہوں نے بتایا کہ ادارے میں اس وقت صوبے کے مختلف اضلاع سے تعلق رکھنے والے 125بے سہارا بچے زیر کفالت ہیں جبکہ سال کے آخر تک ایک ہزاربے سہار ابچوں کو رجسٹرڈ کرنے کا ہدف پورا کیا جائے گا ۔ چیف ایگزیکٹیو نے مزید بتایا کہ ''زمونگ کور''میں بچوں کے علاوہ بے سہارا بچیوں کیلئے بھی علیحدہ کفالت کے انتظام کیلئے اقداما ت کئے جارہے ہیں ۔حارث خٹک نے وفد کو بتایا کہ زمونگ کور میں بے سہارا بچوں کو گھر جیسا ماحول فراہم کیا گیا ہے جہا ں ان کی تعلیم وتربیت کے ساتھ ساتھ ان کی کر دار سازی پر بھی بھر پور توجہ دی جاتی ہے ۔اس موقع پر میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے سپیکر اسد قیصر نے کہا کہ ''زمونگ کور''کا قیام موجودہ حکومت کی اس سوچ کی عکاسی کرتاہے کہ بے سہارااور یتیم بچے بھی اس معاشرے کا اہم حصہ ہیں اور ان کی تعلیم و تربیت اور پرورش کیلئے ایک ایسا منظم ادارہ بنایا جائے جس کے ذریعے وہ بھی دیگر بچوں کی طرح پر وقار زندگی بسر کرسکیں اور ملک و قوم کی ترقی میں اپنا بھر پور کردار ادا کرسکیں ۔اسدقیصرنے کہا کہ ''زمونگ کور''کی طرز پر بے سہارا اور نادار بچوں کی کفالت کے اداروں کو صوبے کے دیگر اضلاع تک وسعت دی جائے گی انہوں نے کہا کہ حکومت نے ''زمونگ کور''کے قیام کیلئے چار سو ملین روپے کی خطیر رقم فراہم کی تھی اور اس جیسے دیگر سرکاری فلاحی اداروں کی فعالیت اور اس کی کارکردگی کو مزید بہتر بنانے کیلئے وسائل کی کمی کو آڑے نہیں آنے دیا جائے گا ۔سپیکر نے کہا کہ بے سہارا اور یتیم بچوں کی کفالت صرف حکومت کی ہی نہیں بلکہ معاشرے کی مجموعی ذمہ داری ہے انہوں نے مخیر حضرات اور غیر سرکاری تنظیموں سمیت بیرون ممالک مقیم پاکستانیوں سے بھی اپیل کی کہ وہ بے سہارا بچوں کو اپنے پاؤں پر کھڑا کرنے اور ان کی محرومیاں ختم کرنے کیلئے حکومتی کاوشوں میں بھر پور حصہ لیں ۔صدر برٹش پختون ایسوسی ایشن اور ان کے ہمراہ برطانیہ کے وفد نے اس موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ خیبر پختونخوا حکومت حقیقی معنوں میں ایک فلاحی حکومت ہے جس نے ''زمونگ کور''جیسا ماڈل ادارہ قائم کرکے بے سہارا اور یتیم بچوں کی کفالت کیلئے ایک مثال قائم کی ہے جس کی پاکستان کے دیگر صوبوں کو بھی تقلید کرنی چاہیے ۔انہوں نے کہا کہ ہم صوبائی حکومت کے اس اقدام کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں ۔انہوں نے سپیکر اسد قیصر اور''زمونگ کور''کے سربراہ میجر ریٹائرڈ حارث خٹک کی کاوشوں کو سراہتے ہوئے یقین دلایا کہ وہ برطانیہ واپس جاکر پاکستانی کمیونٹی اور دیگر فلاحی اداروں کو ''زمونگ کور''جیسے دیگر اداروں کے قیام کیلئے مالی تعاون فراہم کرنے کی جانب راغب کرنے کیلئے اپنا بھر پور کردار ادا کریں گے ۔بعد ازاں سپیکر اسدقیصر اور برطانیہ کے دس رکنی وفد نے ''زمونگ کور''کا تفصیلی معائنہ کیا اور وہاں پر مقیم بے سہارا بچوں کے ساتھ بھر پور وقت گزارا اور ان کے تاثرات سے آگاہی بھی حاصل کی ۔ اس موقع پر سپیکر اسد قیصرنے نادار بچوں میں تحائف بھی تقسیم کئے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -