کلبھوشن بھارت کا بیٹا ہے ،اسے بچانے کیلئے کسی بھی حد تک جائیں گے:بھارتی وزیرخارجہ سشما سوراج کی پاکستان کو دھمکی

کلبھوشن بھارت کا بیٹا ہے ،اسے بچانے کیلئے کسی بھی حد تک جائیں گے:بھارتی ...
 کلبھوشن بھارت کا بیٹا ہے ،اسے بچانے کیلئے کسی بھی حد تک جائیں گے:بھارتی وزیرخارجہ سشما سوراج کی پاکستان کو دھمکی

  

نئی دہلی(ڈیلی پاکستان آن لائن)بھارتی وزیرخارجہ سشما سوراج نے پاکستان کو دھمکی دیتے ہوئے کہا ہےکہ کلبھوشن کو بچانے کیلئے کسی بھی حد تک جائیں گے، کلبھوشن کی سزا پر عملدرآمد سوچا سمجھا قتل تصور ہو گا، ہم کلبھوشن کے معاملے پر بے خبر نہیں ، وہ بھارت کا بیٹا ہے،سزا پر عمل درآمد دو طرفہ تعلقات کے لئے انتہائی نقصان دہ ہو گا ۔

ٹروکالر کی نئی ایپلیکیشن متعارف، گوگل ڈو کیساتھ انضمام کا بھی اعلان

تفصیلات کے مطابق بھارتی راجیہ سبھا میں بیان دیتے ہوئے سشما سوراج نے کہا کہ ان کا ملک پاکستان میں قید اپنے شہری کلبھوشن یادو کو سزائے موت سے بچانے کے لیے ہر ممکن اقدامات کرے گا۔انڈین وزیرِ خارجہ نے پاکستان کو دھمکی آمیز لہجے میں کہنا تھا کہ میں پاکستانی حکومت کو خبردار کرتی ہوں کہ وہ اس معاملے پر آگے بڑھنے سے قبل اس کے ہماری دوطرفہ تعلقات پر پڑنے والے اثرات پر غور کر لے،پاکستان نے کلبھوشن کی سزا پر عمل کیا گیا تو یہ اقدام دو طرفہ تعلقات کے لیے نقصان دہ ثابت ہوگا۔بھارتی وزیرخارجہ سشما سوراج نے نیا راگ الاپتے ہوئے کہا کہ کلبھوشن پرپاکستان کی کارروائی مضحکہ خیز ہے،ہم کلبھوشن پر سپریم کورٹ کا وکیل کریں گے اور ضروری ہوا تو اس معاملے پر بھارتی صدر سے بھی رابطہ کریں گے۔سشما سورا ج کا مزید کہنا تھا کہکلبھوشن کو ایران سے اغوا کیا گیا تھا، وہ بےقصور ہے اور یہ سارا ڈرامہ انڈیا کو بدنام کرنے کے لیے کیا گیا ہے،ہم کلبھوشن کے معاملے پر بے خبر نہیں ہیں وہ بھارت کا بیٹا ہے اور ہم کلبھوشن کے معاملے پر ان کے اہل خانہ سے بھی رابطے میں ہیں۔انھوں نے راجیہ سبھا کے اراکین کو یقین دلایا کہ مودی سرکار نہ صرف سپریم کورٹ میں مقدمہ لڑنے کے لیے کلبھوشن کو بہترین وکلا مہیا کرے گی بلکہ انھیں بچانے کے لیے کسی بھی حد تک جائے گی،ہم اس معاملے کو پاکستانی صدر تک بھی لے جائیں گے۔واضح رہے کہ گذشتہ برس مارچ میں بلوچستان سے حراست میں لیے جانے والے انڈین بحریہ کے افسر کلبھوشن یادو کو پاکستان کے خلاف جاسوسی اور دیگر الزامات کے تحت فوجی عدالت میں کورٹ مارشل کے بعد سزائے موت دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔یہ بھی یاد رہے کہ پاکستانی سیکیورٹی فورسز کے ہاتھوں اپنی گرفتاری کے بعد بھارتی جاسوس کلبھوشن یادو نے اپنے اعترافی بیان میں تسلیم کیا تھا کہ انھیں ’’را‘‘ نے پاکستان میں جاسوسی ،دہشت گردی کی کارروائیوں ،پاکستان کو عدم استحکام سے دوچار کرنے کی منصوبہ بندی،رابطہ کاری اور بھارتی خفیہ ایجنسی کے خفیہ نیٹ ورک کو منظم کرنے کی ذمہ داری سونپی گئی تھی ۔ واضح رہے کہ بھارتی جاسوس کلبھوشن یادو کی گرفتاری کے بعد انڈیا کی وزراتِ خارجہ نے ایک بیان میں کلبھوشن یادو کے اعترافی بیان کی ویڈیو کو مسترد کرتے ہوئے کہا تھا کہ بلوچستان میں گرفتار کیے گئے شخص کا بھارت کی حکومت سے کوئی تعلق نہیں ہے اور یہ ویڈیو جھوٹ پر مبنی ہے تاہم بعد میں انڈین حکام نے تسلیم کیا تھا کہ کلبھوشن انڈین بحریہ کے سابق افسر ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -اہم خبریں -