عرب ملک کے بازار میں ایک ایسی چیز بکنے لگی جو پوری دنیا میں کہیں نہیں بکتی، ایسی کیا چیز ہے؟ جان کر پوری دنیا کانپ اُٹھی

عرب ملک کے بازار میں ایک ایسی چیز بکنے لگی جو پوری دنیا میں کہیں نہیں بکتی، ...
عرب ملک کے بازار میں ایک ایسی چیز بکنے لگی جو پوری دنیا میں کہیں نہیں بکتی، ایسی کیا چیز ہے؟ جان کر پوری دنیا کانپ اُٹھی

  

تریپولی(مانیٹرنگ ڈیسک) لیبیاکے بازار میں ایک ایسی چیز فروخت ہونے لگی ہے کہ جان کر دنیا کانپ اٹھی ہے۔ یہ چیز کوئی جانور یا جنس نہیں بلکہ انسان ہے۔ دی گارڈین کی رپورٹ کے مطابق مغربی افریقی ممالک سے لوگ بہتر مستقبل کے سپنے آنکھوں میں سجائے لیبیا میںداخل ہوتے ہیں تاکہ وہاں سے یورپ جا سکیں لیکن انہیں لیبیا میں انسانیت سوز حالات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔انسانوں کے تاجروں سے بچ نکلنے والے افریقی باشندوں نے اقوام متحدہ کی پناہ گزین ایجنسی کو بتایا ہے کہ ”لیبیا میں انسانوں کی خریدوفروخت کے لیے کھلے عام منڈیاں لگائی جاتی ہیں اور جانوروں کی طرح انہیں خریدا اور بیچا جا تا ہے۔“

’اگر دنیا تباہ بھی ہوگئی تو یہ چیز محفوظ رہے گی۔۔۔‘ یورپی ملک نے دنیا کی مضبوط ترین عمارت قائم کردی، یہاں کیا چیز رکھی جارہی ہے؟ کوئی کھانے پینے کی چیز نہیں بلکہ۔۔۔ ایسی چیز یہاں محفوظ کرنے کا فیصلہ کہ کوئی سوچ بھی نہ سکتا تھا

قبل ازیں یہ شمالی باشندے لیبیا میں تشدد، اغواءبرائے تاوان اور جبری مشقت کروائے جانے کے متعلق بتا چکے ہیں لیکن اس نئے انکشاف نے دنیا کو چونکا دیا ہے۔آئی او ایم کے شعبہ آپریشن اینڈ ایمرجنسی کے سربراہ محمد عبدیکر کا کہنا تھا کہ ”لیبیا میں پناہ گزینوں کی حالت انتہائی قابل رحم ہے۔وہاں افریقی باشندوں پر پہلے ہی ڈھائے جانے والے مظالم کی فہرست بہت طویل تھی جس میں اب ان کی خریدوفروخت جیسے بھیانک جرم کا اضافہ ہو گیا ہے۔“واضح رہے کہ بہت سے افریقی ممالک سے یورپ جانے کا بڑا راستہ لیبیا سے ہو کر جاتا ہے۔ پہلے لیبیا میں یہ صورتحال نہیں تھی لیکن کرنل معمر قذافی کو ہٹائے جانے کے بعد لیبیا میں حالات بہت دگرگوںہو گئے جس کے بعد افریقی ممالک سے آنے والوں پر بھی مظالم شروع ہو گئے جو اب انتہاءکو پہنچ چکے ہیں۔

مزید :

عرب دنیا -