موت عمر قید ،ہائی کورٹ کا5ملزموں کو شک کی بنیاد پر بری کرنیکا حکم

موت عمر قید ،ہائی کورٹ کا5ملزموں کو شک کی بنیاد پر بری کرنیکا حکم

ملتان(خبر نگار خصوصی) ہائیکورٹ ملتان کے ڈویثرن بنچ نے قتل کے مقدمات میں موت اور عمر قید کی سزا پا نے والے5 ملزمان کو شک کا فائدہ دیتے ہوئے بری کرنے کا حکم دیاہے۔(بقیہ نمبر40صفحہ7پر )

فاضل عدالت میں سزاؤں کے خلاف اپیل دائر کی گئی تھی کہ سیشن کورٹ ساہیوال نے خاندانی جھگڑے اور رقم کے لین دین کے تنازعہ پر ایک شخص کو قتل کرنے کے مقدمہ میں محمد وارث کو موت جبکہ محمد ندیم کو عمر قید کی سزا سنائی تھی جبکہ وہ بے قصور ہیں اس لیے مقدمہ سے بری کرنے کا حکم دیا جائے ، ملزمان کے وکیل نے دلائل دیے کے عدالت نے ناکافی ثبوتوں کی بنیاد پر سزا دی جبکہ واقع کا کوئی گواہ نہیں ہے۔اسی طرح ملزمان اللہ ڈتہ اور رفیق احمد نے اپیلیں دائر کی تھی کہ ان کے خلاف تھانہ صدر مظفر گڑھ میں معمولی تنازعہ پر شاکر حسین کو 2011 ء میں قتل کرنے کا مقدمہ درج کیا گیا تھا جس پر ملزم اللہ ڈتہ کو موت جبکہ رفیق احمد کو ایک سال قید اور 10 ہزار جرمانہ کی سزاسنائی گئی جس میں گزشتہ روز فاضل عدالت نے ملزمان کو بری کردیاہے۔ دریں اثناء ملزم فرحان احمد نے درخواست دائر کی تھی کہ اس کے خلاف خانیوال کے تھانہ کچا کھو میں 2009ء میں احمد نواز نامی شخص کو قتل کرنے کا مقدمہ درج کیا گیا تھا جس میں سیشن کورٹ نے 2015 ء میں اسے سزائے موت سنائی تھی تاہم گزشتہ روز سماعت میں فاضل عدالت نے ملزم کو بری کرنے کا حکم دیاہے۔

سزا

مزید : ملتان صفحہ آخر