افغان سرحدی چوکی پر طالبان کا قبضہ ،باد غیس میں گھمسان کی جنگ

افغان سرحدی چوکی پر طالبان کا قبضہ ،باد غیس میں گھمسان کی جنگ

کابل(مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) افغانستان کے مختلف علاقوں میں طالبان کے حملوں میں 20سکیورٹی اہلکار ہلاک اور متعدد زخمی جبکہ 8اہلکار لاپتہ ہوگئے ، قندھار پولیس کے سیکرٹری قاسم آزاد نے حملے کی تصدیق کرتے ہوئے دعوی کیا کہ جوابی کارروائی میں 17 طا لبا ن جنگجو بھی ہلاک ہوئے۔بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق افغانستان میں موسم گرما کے آغاز کیساتھ ہی طالبان کے حملوں میں اضا فہ ہوگیا ہے، رات گئے صوبہ قندھارمیں افغان فوج کی سرحدی چوکی پر طالبان کے حملے میں بیس فوجی ہلاک اورآٹھ لاپتہ ہوگئے،افغان حکا م کے مطابق خدشہ ہے لاپتہ فوجیوں کو طالبان اغوا کرکے لے گئے ہیں، جوابی کارروائی میں افغان حکام نے سترہ طالبان جنگجوؤں کے ہلا ک ہونے کا بھی دعویٰ کیا ہے ،دوسری جانب طالبان نے حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے چوکی پر قبضے کا دعوی کیا تاہم افغان حکومت نے دعوے کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے فوجی چوکی بدستور ان کے کنٹرول میں ہے۔ادھر صوبہ بادغیس میں طالبان نے ضلع بالا مرغاب پر بڑ ا حملہ کیا وہاں گھمسان کی جنگ جاری ہے،اب تک 30 افغان سکیورٹی اہلکار جبکہ 100سے زائد طالبان بھی مارے جا چکے ہیں ۔واضح رہے گزشتہ روز بھی امریکی فوجی اڈے بگرام کے قریب طالبان کے حملے میں 4امریکی فوجی ہلاک ہوگئے تھے، جبکہ امریکی صدر ٹرمپ 18 سال سے جاری جنگ کے خاتمے کیلئے طالبان سے مذاکرات بھی کررہے ہیں۔

افغانستان

مزید : صفحہ آخر