فوڈ اتھارٹی کی کارروائی‘ 12 ہزار لیٹر مضر صحت جوس تلف

فوڈ اتھارٹی کی کارروائی‘ 12 ہزار لیٹر مضر صحت جوس تلف

پشاور(سٹاف رپورٹر) خیبرپختونخوا فوڈ سیفٹی اینڈ حلال فوڈ اتھارٹی نے بدھ کے روز مردان کے علاقے گلی باغ اور محب بانڈہ میں دو مختلف کارروائیوں کے دوران مضر صحت جوس بنانے والی فیکٹریوں کو سیل کرکے ہزاروں لیٹر جوس تلف کردیا جبکہ مالکان کو حوالہ پولیس کیا گیا۔ ڈائریکٹر جنرل کے پی فوڈ اتھارٹی ریاض خان محسود نے ٹیم کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے جعلی مشروبات اور جوس کیخلاف کاروائیاں مزید تیز کرنے کے احکامات جاری کیے۔ڈپٹی ڈائریکٹر مردان ڈویژن ذیشان خان محسود نے یہاں سے جاری ایک بیان میں کہا کہ دونوں فیکٹریوں کی اطلاع عوامی شکایات سیل پر ملی تھی جس پر اسسٹنٹ ڈائریکٹر رحم العزیز کی سربراہی میں دو ٹیمیں تشکیل دی گئیں اور دونوں جوس یونٹس کا اچانک معائنہ کیا گیا۔ ڈپٹی ڈائریکٹر کا مزید کہنا تھا کہ مردان کے مضافات میں غیر معیاری چپس اور جوس فیکٹریوں کی بھرمار ہے لیکن یہ لوگ زیادہ تر گھروں کے اندر کاروبار چلاتے ہیں جس سے ان کیخلاف کاروائیوں میں دقت پیش آرہی ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ تاحال انہوں نے گھروں میں واقع بیس ایسی فیکٹریاں سیل کی ہیں جو مضر صحت مشروبات اور چپس بنانے میں مصروف تھیں۔اسسٹنٹ ڈائریکٹر رحم العزیز نے آپریشن کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ دونوں یونٹس گھروں کے اندر واقع تھیں جہاں صفائی کا کوئی پرسان حال نہ تھا جب بچے ہاتھوں سے جوس کو پلاسٹک کے غیر معیاری بوتلوں میں پیک کرتے تھے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ تیارشدہ جوس دیہی علاقوں کو سپلائی کرکے سستے داموں بیچا جاتا تھا۔ دونوں فیکٹریوں کو سیل کرکے مالکان کو حوالہ پولیس کردیا گیا۔ اسسٹنٹ ڈائریکٹر کے مطابق آپریشن کے دوران دس ہزار لیٹر مضر صحت جوس تلف کردیا گیا جبکہ یونٹس میں موجود مشینری بھی قبضے میں لی گئی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر