حج مبارک، دس لاکھ کا اجتماع ہو گا!

حج مبارک، دس لاکھ کا اجتماع ہو گا!

  

سعودی حکومت نے اس سال دس لاکھ ملکی اور غیر ملکی عازمین کو فریضہ حج کی ادائیگی کی اجازت دی ہے۔کورونا وبا کے تین سال بعد اتنی بڑی تعداد میں زائرین مکہ اور مدینہ میں یہ فریضہ ادا کریں گے،آخری بار2019ء میں پچیس لاکھ افراد نے حج کیا تھا، پھر کورونا پھیلنے کے باعث یہ اجتماع ممکن نہ رہا،ایک سال صرف ایک ہزار اور گذشتہ برس60ہزار افراد کو اجازت دی گئی، اب  دس لاکھ افراد کو شرکت کی اجازت دی گئی ہے،تاہم اس فریضہ کوا دا کرنے والے افراد65سال تک کی عمر کے ہوں گے اور مکمل ویکسین لگوانے کی شرط بھی ہے،جبکہ سعودی عرب میں داخلے سے72گھنٹے قبل کورونا ٹیسٹ بھی لازم ہو گا، سعودی حکومت کی طرف سے معمول کے مطابق دنیا بھر سے آنے والے حجاج کے لئے کوٹہ مختص کیا جاتا ہے۔اس سال کے لیے ابھی تک اطلاع سامنے نہیں آئی کہ پاکستان کے لئے کتنا کوٹہ مختص کیا گیا ہے۔اگرچہ سابق حکومت نے حج پالیسی مرتب کر لی تھی تاہم نئی صورت حال میں نئی انتظامیہ ذمہ داری نبھائے گی،وقت کم ہے،اس لیے نئی حکومت کو تیزی سے انتظامات کرنا ہوں گے۔توقع ہے کہ حکومت ِ پاکستان اور سعودی حکومت کے رابطوں کے نتیجے میں جلد ہی معمول کے امور طے پا جائیں گے اور ہماری حج وزارت حج کمپنیوں کے کوٹوں کی تقسیم کا فیصلہ بھی جلد کر لے گی۔

مزید :

رائے -اداریہ -