73ء کاآئین ہی وفاق کی سالمیت اور بقا کی ضمانت ہے: آصف زرداری 

      73ء کاآئین ہی وفاق کی سالمیت اور بقا کی ضمانت ہے: آصف زرداری 

  

       اسلام آ باد (سٹاف ر پورٹر) سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ 73 کا آئین ہی وفاق کی سالمیت اور بقا کی ضمانت ہے۔ قوم کو یوم دستور پر مبارکباد دیتے ہوئے آصف علی زرداری نے کہا کہ قائد عوام ذوالفقار علی بھٹو نے آج کے دن قوم کو متفقہ دستور دیا تھا، 73 کا آئین ہی وفاق کی سالمیت اور بقا کی ضمانت ہے۔ آصف علی زرداری نے کہا کہ بینظیر بھٹوشہید نے 1973 کے آئین کی بحالی کیلئے زندگی بھر جدوجہد کی، اسی آئین کی خاطر بینظیر بھٹو شہید نے قید اور مشکلات برداشت کیں۔ انہوں نے کہا کہ 1973 کی آئین کی  بحالی کیلئے آزادی صحافت کے علمبرداروں نے بھی  جدوجہد کی، 1973 کیآئین کیلئے پھانسیاں،کوڑے اور قید قبول کرنے والوں کو سرخ سلام پیش کرتے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ 18ویں آئینی ترمیم وفاق اور اکائیوں کے درمیان ایک میثاق ہے، آئین کی حکمرانی سیملک کی سلامتی اور اداروں کی ساکھ مستحکم ہوگی۔ بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ نیازی حکومت کے خاتمے کے بعد دستور اور جمہوریت محفوظ ہیں۔ قومی یومِ دستور پر پیغام  دیتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ پی پی پی چیئرمین کا قوم کو یومِ دستور کی مبارکباد، شہید بھٹو کی زیرِ قیادت دستورسازی میں کردار ادا کرنے والوں کو سلام پیش کرتے ہیں۔ بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ  1973ع کا آئین ہمارے قومی اتحاد کا بائنڈنگ فورس ہے، ہمارا آئین جمہوری استحکام، معاشرتی مساوات، پائیدار معیشت اور مضبوط ریاست کے حصول کا متفقہ قومی لائحہ عمل ہے۔ چیئرمین سینیٹ محمد صادق سنجرانی نے کہا ہے کہ  یوم دستور پر میں قوم کو مبارک باد دیتا ہوں، آئین پاکستان کا مسودہ تیار کرنے والوں کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں،یوم تشکر کی روایت سینیٹ آف پاکستان نے ڈالی ہے۔ یوم دستور کے موقع پر اپنے خصوصی پیغام میں چیئرمین سینیٹ محمد صادق سنجرانی نے کہا کہ یوم دستور پر میں قوم کو مبارک باد دیتا ہوں، آئین پاکستان کا مسودہ تیار کرنے والوں کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔ چیئرمین سینیٹ نے کہا کہ یوم دستور ایک اہم دن ہے اور گزشتہ چند برسوں سے باقاعدہ طور پر منایا جا رہا ہے جبکہ یوم تشکر کی روایت سینیٹ آف پاکستان نے ڈالی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں 10اپریل کو یوم دستور منایا جاتا ہے، ایوان بالا 1973 کے آئین کے تحت وجود میں آیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایوان بالا میں تمام صوبائی اکائیوں کو یکساں نمائندگی حاصل ہے، آئین کا مسودہ ملک کی تمام سیاسی جماعتوں کی متفقہ رائے سے پاس کیا گیا۔ سینیٹر شیری رحمان نے کہا  ہے کہ پی ٹی آئی کی سابق حکومت نے شہید ذوالفقار علی بھٹو کے آئین کے خلاف ورزی کی،لیکن پارلیمان میں موجود تمام جمہوری سیاسی جماعتوں نے مل کر آئین شکنی کرنے والوں کو شکست دی، نادان اور نئے سیاستدانوں کو اپنی غلطیوں سے سیکھنا چاہئے۔اتوار کو سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے ایک بیان میں سینیٹر شیری رحمان نے کہا کہ10اپریل 1973کے دن دستور پاکستان متفقہ طور پر منظور کیا گیا تھا، آج کا دن تمام جمہوریت پسند پاکستانیوں بالخصوص پیپلز پارٹی کے لئے اہم ہے، شہید بھٹو نے مکمل شراکت داری سے اور اتفاق رائے سے آئین منظور کروایا تھا، شیری رحمان نے کہا کہ پی ٹی آئی کی سابق حکومت نے شہید ذوالفقار علی بھٹو کے آئین کے خلاف ورزی کی،لیکن پارلیمان میں موجود تمام جمہوری سیاسی جماعتوں نے مل کر آئین شکنی کرنے والوں کو شکست دی، نادان اور نئے سیاستدانوں کو اپنی غلطیوں سے سیکھنا چاہئے،  انہوں نے مزید کہا کہ نااہل اور آئین شکن حکومت کے خاتمہ میں ہی ملک و عوام کی بہتری ہے، عوام اور تمام اپوزیشن جماعتوں کو نالائق حکومت کے خاتمے پر مبارک پیش کرتی ہوں۔

یوم دستور

مزید :

صفحہ اول -