پینل آف چیئر ایاز صادق نے وزیراعظم کی نامزدگی پیش کرتے ہوئے شہبازشریف کی بجائے نوازشریف کا نام لے لیا ، پھر کیا ہوا؟ جانئے 

پینل آف چیئر ایاز صادق نے وزیراعظم کی نامزدگی پیش کرتے ہوئے شہبازشریف کی ...
پینل آف چیئر ایاز صادق نے وزیراعظم کی نامزدگی پیش کرتے ہوئے شہبازشریف کی بجائے نوازشریف کا نام لے لیا ، پھر کیا ہوا؟ جانئے 

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن )پینل آف چیئر ایاز صادق وزیراعظم کیلئے نامزدگی پیش کرتے ہوئے شہبازشریف کی بجائے نوازشریف کا نام لے گئے ۔نئے وزیراعظم کے انتخاب کیلئے ووٹنگ کا عمل جاری ہے۔

تفصیلات کے مطابق ایاز صادق کو فوری اپنی غلطی کا احساس ہوا اور انہوں نے مسکراتے ہوئے معذرت کی اور کہا کہ شہبازشریف آپ سے معذرت کرتاہوں ، نوازشریف دل اور دماغ میں بسے ہوئے ہیں ۔ اس دوران( ن) لیگ کے اراکین اسمبلی کی جانب سے نوازشریف زندہ باد کے نعرے لگا دیئے گئے ۔

یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ  نئے وزیراعظم کے انتخاب کیلئے اسمبلی کا اجلاس قائم مقام سپیکر قاسم سوری کی زیر صدارت جاری تھا کہ انہوں نے شاہ محمود قریشی کو اظہار خیال کی دعوت دی، شاہ محمود قریشی نے تقریر کی اور ان کی گفتگو کے اختتام پر پی ٹی آئی کے تمام اراکین اسمبلی اپنی نشستوں پر کھڑے ہوئے اور ’’ آزادی آزادی‘‘ کے نعرے لگاتے ہوئے ہال سے باہر چلے گئے، تحریک انصاف کے اراکین اسمبلی جیسے ہی اٹھ کر جانے لگے تو قائم مقام سپیکر نے بھی اجلاس کی صدارت چھوڑتے ہوئے کہا کہ میرا ضمیر گوارا نہیں کرتا کہ میں اس سارے عمل کا حصہ بنوں۔ قائم مقام سپیکر قاسم سوری نے اجلاس کی صدارت پینل آف چیئر ایاز صادق کے حوالے کی اور تحریک انصاف کی جانب سے اجلاس کا بائیکاٹ کر دیا گیا۔

مزید :

قومی -