وزیر اعظم شہباز شریف نے پہلے ہی خطاب میں مودی کو مشورہ دے دیا

وزیر اعظم شہباز شریف نے پہلے ہی خطاب میں مودی کو مشورہ دے دیا
وزیر اعظم شہباز شریف نے پہلے ہی خطاب میں مودی کو مشورہ دے دیا
سورس: Twitter

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) نو منتخب وزیر اعظم شہباز شریف کا کہنا ہے کہ پاکستان بھارت کے ساتھ اچھے تعلقات کا خواہاں ہے لیکن یہ اسی صورت ممکن ہے جب کشمیر کا مسئلہ حل ہوجائے۔

قومی اسمبلی میں بطور قائد ایوان اپنے پہلے خطاب میں شہباز شریف کا کہنا تھا کہ نواز شریف نے بھارت کے ساتھ امن کا ہاتھ بڑھایا لیکن اسی  نواز شریف نے جنرل اسمبلی میں کشمیریوں کے حق خود ارادیت کے حوالے سے شاندار تقریر بھی کی ۔ گزشتہ حکومت میں  جب بھارت نے کشمیر میں آرٹیکل 370  کا خاتمہ کیا تو سرینگر ہائی وے بلاک کرنے کے علاوہ کوئی سنجیدہ کوشش نہیں کی گئی۔

انہوں نے کہا کہ بد قسمتی سے ہمارے بھارت کے ساتھ تعلقات اچھے نہیں رہے، ہم اس کے ساتھ اچھے تعلقات کے خواہاں ہیں لیکن مسئلہ کشمیر کے منصفانہ حل تک پائیدار امن قائم نہیں ہوسکتا ۔

شہباز شریف کا کہنا تھا "وزیر اعظم مودی کو یہ مشورہ دوں گاکہ آپ سمجھیں کہ دونوں اطرف جو غربت ہے، آئیں کشمیر کا مسئلہ اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل کریں اور دونوں اطراف غربت کو ختم کریں اور ترقی و خوشحالی لے کر آئیں۔"

مزید :

قومی -