’اگرا سٹیبلشمنٹ نیوٹرل ہے تو پھر انہیں نیوٹرل رہنا چاہیے‘ وسیم بادامی کے سوال پر حماد اظہر کا جواب

’اگرا سٹیبلشمنٹ نیوٹرل ہے تو پھر انہیں نیوٹرل رہنا چاہیے‘ وسیم بادامی کے ...
’اگرا سٹیبلشمنٹ نیوٹرل ہے تو پھر انہیں نیوٹرل رہنا چاہیے‘ وسیم بادامی کے سوال پر حماد اظہر کا جواب

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )سابق وزیر توانائی حماد اظہر نے کہا ہے کہ بیرونی قوتوں نے پاکستان کی سیاسی قوتوں کو استعمال کیا ، اگر اسٹیبلشمنٹ نیوٹرل ہے تو پھر انہیں نیوٹرل رہنا چاہیے ۔

اے آر وائی نیوز کے پروگرام میں بات کرتے ہوئے حماد اظہر نے کہا کہ جب کوئی جرم ہوتا ہے تو دیکھا جاتا ہے کہ اس کا سب سے زیادہ فائدہ کس کو ہوا ،ہمارا ہدف اس جرم میں ملوث وہ ہی لوگ ہیں ۔ ان کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ کے فیصلے کو تسلیم کرتے ہیں لیکن اس پر میرے تحفظات ہیں ، ہماری سیاسی جدو جہد ملکی سا لمیت کے لیے ہے ۔اس موقع پر میزبان وسیم بادامی نے سوال کیا کہ کیا اس ساری صورتحال میں اسٹیبلشمنٹ نے وہ ہی کیا جو انہیں کرنا چاہیے تھا؟ اس پر جواب دیتے ہوئے حماد اظہر نے کہا کہ اسٹیبلشمنٹ کو جو ٹھیک لگتا ہے انہیں وہ ہی کردار ادا کرنا چاہیے ،ہم کون ہوتے ہیں انہیں کچھ کہنے والے ،نہ انہوں نے ہمارے کہنے پر چلنا ہے ۔انہوں نے کہا کہ میرا خیال ہے کہ اگر اسٹیبلشمنٹ نیوٹرل ہے تو پر انہیں نیوٹرل رہنا چاہیے اور انہیں ملکی سا لمیت کے لیے جو عوام چاہتی ہے ان کے ساتھ کھڑے ہونا چاہیے۔

مزید :

قومی -