100سال تک اپنے جوہری منصوبوں کو یورینیم فراہم کر سکتے ہیں،روس

100سال تک اپنے جوہری منصوبوں کو یورینیم فراہم کر سکتے ہیں،روس

                                     ماسکو (آن لائن)روس نے اعلان کیا کہ اس کے پاس یورینیم کی اتنی مقدار ہے جوسوسال تک ملک اور غیر ملکی جوہری منصوبوں کو فراہم کرسکتا ہے۔خبررساں ادارے اطار طاس کے مطابق روس کی طرف سے یہ اعلان اس وقت سامنے آیا جب آسٹریلیا کی طرف سے روس کو یورینیم کی فراہمی پربند ش کا امکان ہے۔رپورٹ کے مطابق روسی قومی جوہری کارپوریشن روسٹم کا کہنا ہے روس دنیا کا دوسرا سب سے بڑا یورینیم پروڈیوسر ہے۔ روس بشمول قازقستان کے پاس یورینیم کے خام مال کے ذخائر اتنے ہیںجواگلے سو سال کی ضروریات کو پورا کرسکتے ہیں یہ ذخائرنہ صرف ملکی بلکہ غیر ملکی جوہری منصوبوں کی فراہمی کیلئے کا فی ہیں۔کارپوریشن کے نمائندے سرگئی نویکوو کایہ بیان آسٹریلیا کی طرف سے روس کو یورینیم کی ممکنہ بندش کے تناظر میں سامنے آیا۔یورینیم کے دنیا میں سب سے زیادہ ذخائر آسٹریلیا کے پاس ہیں۔2007ءمیں، روس اور آسٹریلیا نے جوہری توانائی کے پرامن استعمال میں تعاون کے ایک بین الحکومتی معاہدے پر دستخط کئے، اور 2012 ء میں روس کو آسٹریلوی یورینیم کی پہلی کھیپ موصول ہوئی۔ پابندیوں کی وجہ سے آسٹریلیا کی حکومت روس کو یورینیم کی فراہمی بند کرنے پر غور کر رہی ہے۔

مزید : عالمی منظر