راستے بلاک، سرکاری ہسپتالوں میں آکسیجن نہ پہنچ سکی، مریضوں کی زندگیاں خطرے میں پڑگئیں

راستے بلاک، سرکاری ہسپتالوں میں آکسیجن نہ پہنچ سکی، مریضوں کی زندگیاں خطرے ...
راستے بلاک، سرکاری ہسپتالوں میں آکسیجن نہ پہنچ سکی، مریضوں کی زندگیاں خطرے میں پڑگئیں

  



لاہور (ویب ڈیسک) شہر کے داخلی و کارجی راستے بند رہنے کی وجہ سے سرکاری ہسپتالوں میں انتہائی نگہداشت وارڈز میں تشویشناک حالت کے زیرعلاج مریجوں کی سانس بحال رکھنے کے لئے استعمال ہونے والی لیکوڈ آکسیجن گیسز کی سپلائی بند رہی۔ سرکاری ہسپتالوں میں گیس کی سپلائی نہ ہونے سے انتہائی نگہداشت ورڈز میں داخل مریجوں کی زندگیاں خطرے میں پڑ گئیں۔ ہسپتالوں کی انتظامیہ مذکورہ صورتحال سے پریشان ہے اور متبادل انتظامات نہ ہونے کی وجہ سے پنجاب حکومت سے اس سنگین مسئلے کے حل کے لئے رابطہ کرلیا۔ ذرائع کے مطابق پنجاب حکومت نے عوامی تحریک کے کارکنوں کو لاہور میں داخل ہونے سے روکنے کے لئے شہر کے داخلی و خارجی راستوں کو بھاری رکاوٹوں سے بند کئے رکھا جس کی وجہ سے فیروزوالا سے سرکاری ہسپتالوں میں مصنوعی سانس فراہم کرنے کے لئے استعمال ہونے والی گیسز کی سپلائی تعطل کا شکار رہی اور ہسپتالوں میں سٹاک ن ہونے کے برابر رہا جس کی وجہ سے گیس پریشر کم ہوگیا اور مریضوں کو شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑا۔

مزید : لاہور