بیرکیں خالی کرانے کا حکم، محکمہ جیل کے افسر پریشان

بیرکیں خالی کرانے کا حکم، محکمہ جیل کے افسر پریشان
بیرکیں خالی کرانے کا حکم، محکمہ جیل کے افسر پریشان

  



لاہور (ویب ڈیسک) حکومت پنجاب کی جانب سے عوامی تحریک اور تحریک انصاف کے کارکنوں کی متوقع گرفتاریوں کیلئے بیرکیں خالی کروانے کے حکم پر محکمہ جیل خانہ جات کے اعلیٰ افسران پریشان، پہلے ہی جیلوں میں گنجائش سے 3 گنا زائد قیدی موجود ہیں، گرفتار ہونے والے سینکڑوں کارکنوں کو کہاں رکھیں گے؟ لاہور سے گرفتار کارکنوں کو دوسرے شہروں اور دوسرے شہروں کے کارکنوں کو لاہور ودیگر جیلوں میں رکھا جائیے گا۔ ذرائع کے مطابق حکومت پنجاب نے محکمہ جیل خانہ جات کو حکم جاری کیا ہے کہ وہ عوامی تحریک کے یوم شہداء اور انقلاب مارچ اور تحریک انصاف کے آزاید مارچ پر ان کے کارکنوں کی متوقع بھاری تعداد میں گرفتاریوں کے لئے تیار ہیں اور لاہور کی سینٹرل جیل (کوٹ لکھپت) اور ڈسٹرکٹ (کیمپ) جیل سمیت صوبے بھر کی جیلوں میں ان کے لئے بیرکیں خالی کروالیں۔ محکمہ جیل خانہ جات کے ذرائع کے مطابق افسران حکومت پنجاب کے اس حکم پر پریشان ہیں کیونکہ پنجاب کی جیلوں میں پہلے ہی گنجائش سے 3 گنا زائد یعنی 50 ہزار سے زائد قیدی اور حوالاتی موجود ہیں۔ اب تحریک انصاف اور عوامی تحریک کے متوقع طور پر گرفتار ہونے والے کارکنوں کو کیسے جیلوں میں رکھیں۔

مزید : لاہور