بھارتی فوجیوں کی سنگدلی

بھارتی فوجیوں کی سنگدلی

  



بھارت نے آزاد کشمیر کے شہری کی نعش واپس کر دی ہے جسے تین روز قبل کنٹرول لائن سے اغوا کر لیا گیا تھا، راولا کوٹ(آزاد کشمیر) کی ضلعی انتظامیہ کے مطابق طفیل نامی شخص کو جمعرات کو بھارتی فوجی اغوا کر کے اپنے ساتھ لے گئے تھے حراست کے دوران اس پر تشدد کیا گیا جس سے اس کی موت واقعہ ہو گئی، اس کے مقابلے میں پاکستان کا طرز عمل یہ ہے کہ اس نے بھارت کی بارڈر سکیورٹی فورس کے اہل کار کو صحیح سلامت واپس کر دیا تھا جو پاکستانی علاقے میں داخل ہو گیا تھا، اس اہلکار کی خاطر تواضع اور مہمان نوازی بھی کی گئی جس کا اس نے اپنے ملک میں جا کر اعتراف بھی کیا۔

دونوں ملکوں میں کس کا طرز عمل شریفانہ اور انسانیت نواز ہے ہر کوئی ان دونوں واقعات سے اندازہ کر سکتا ہے۔ اس سے پہلے بھی ایسے واقعات ہو چکے ہیں جب بھارتی سپاہی کسی پاکستانی شہری کو اٹھا کر لے گئے اور اسے یا تو غائب کر دیا یا پھر تشدد کر کے مار ڈالا، تازہ واقعہ میں بھارت نے اتنی بھی مروت نہیں دکھائی کہ اس کے ایک سرکاری اہلکار کو پاکستان نے جذبہ خیر سگالی کے تحت کسی تاخیر کے بغیر اس کے حوالے کر دیا ہے۔ کم از کم اتنا تو کیا جاتا کہ جوابی خیر سگالی کا مظاہرہ کیا جاتا، لیکن لگتا ہے بھارت انسانیت کا درس بھول گیا ہے اور کنٹرول لائن کو حیلوں بہانوں سے گرم رکھنا چاہتا ہے ایسے میں پاکستان کی یکطرفہ خیر سگالی کسی کام نہ آ ئے گی اور اسے بھارتی سنگ دلی کا جواب دینا ہو گا۔

مزید : اداریہ