ہماری کوشش ہے بحران کا حل 14اگست سے پہلے نکل آئے،لیاقت بلوچ

ہماری کوشش ہے بحران کا حل 14اگست سے پہلے نکل آئے،لیاقت بلوچ

  



لاہور (سٹاف رپورٹر) سیکریٹری جنرل جماعت اسلامی لیاقت بلوچ نے کہا ہے کہ ہماری کوشش ہے کہ بحران کا حل 14اگست سے پہلے نکل آئے اور قوم یوم آزادی پورے اطمینان سے منائے ،سیاسی قوتیں ناکام ہوئیں تو تیسری قوت کو آنے سے کوئی نہیں روک سکے گا،جلسے جلوس اور احتجاج جمہوریت کا حسن ہےں ، نواز شریف جب اپوزیشن میں تھے توخود بھی جلسے جلوس اورریلیاں کرتے رہے آج وہ کسی کو اس حق سے کیسے محروم کر سکتے ہیں ،سیاست لچک اورجمہوریت برداشت کا نام ہے ،جماعت اسلامی فریقین کو بند گلی میں جانے سے بچانے کیلئے دروازے کھولنے کی مخلصانہ کوشش کررہی ہے ۔سانحہ ماڈل ٹاﺅن کو ایک ماہ سے زیادہ عرصہ کا ہوچکا ہے مگر تحقیقات کا کو ئی نتیجہ سامنے نہیں آیا،ہم نے وزیر اعظم سے ملاقات میں سانحہ ماڈل ٹاﺅن پر بھی بات کی اور حکومت کو باور کرایا کہ ملک میں امن و امان کی اصل ذمہ داری حکومت کی ہے ،اگر حکومت لوگوں کو ان کے جمہوری حقوق سے محروم کرے گی تو عوام سے پرامن رہنے کی توقع کس طرح کی جاسکتی ہے ۔ حکومت اپوزیشن کے احتجاج کو انا کا مسئلہ نہ بنائے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے اتوار کے روز منصورہ میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ لیاقت بلوچ نے کہا کہ قانون کے نام پر لاقانونیت کسی طرح بھی جائز نہیں،حکومتی رویہ آمریت سے بھی بدتر ہے ، حکومت صبر و تحمل کا مظاہرہ کرتی تو حالات اس نہج پر نہ پہنچتے ،حکومتی حواس باختگی کی وجہ سے پورے ملک میں افراتفری اور انتشار پھیل گیا ہے ،قومی شاہراہوں پر کنٹینر ز لگا کراور رکاوٹیں کھڑی کرکے عوام کو مشکلات کا شکار کردیا گیا ہے ۔حکومت نے لاہور اور اسلام آباد میں احتجاج کو روکنے کیلئے اسے پورے ملک میں پھیلا دیا ہے ۔

لیاقت بلوچ

مزید : صفحہ آخر