عام شہریوں کو عوامی تحریک کا کارکن سمجھ کر حراست میں لیا جاتا رہا

عام شہریوں کو عوامی تحریک کا کارکن سمجھ کر حراست میں لیا جاتا رہا

  




لاہور(کرائم سیل)تھانہ لٹن روڈ ،پولیس اہلکاروں نے تھانہ کے گیٹ پر ناکہ لگا کر عام شہریوں کو پاکستان عوامی تحریک کے کارکن سمجھ کر حراست میں لیا جاتا رہا جبکہ بعد ازاں قوائف چیک کرنے کے بعد کئی افراد کو چھوڑ دیا گیا۔تفصیلات کے مطابق تھانہ لٹن روڈ کے پولیس اہلکار وں نے تھانہ کے گیٹ کے ساتھ موجود سڑک جو کہ اسلام پورہ کی جانب جاتی ہے پرناکہ لگا کر شہریوں کی چیکنگ کرنا شروع کردی جس کی وجہ سے شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔شہریوں نے نمائندہ ’’پاکستان‘‘کو بتایا کہ پولیس اہلکار تھانہ کے ساتھ والی گلی کے ساتھ ناکہ لگا کر شام ہوتے گزشتہ چند روز سے کھڑے ہو جاتے ہیں اور تمام آتے جاتے افراد کو روک لیتے ہیں اورپاکستان عوامی تحریک کے کارکن کے طور پر پکڑ لیتے ہیں بعد ازاں کوائف چیک کر کے چھوڑ دیتے ہیں۔شہریوں کے مطابق تھانہ کے گیٹ پر ناکہ لگانے کی کوئی منطق سمجھ میں نہیں آتی ہے ،کئی شہریوں نے پولیس کی جانب سے بار بار روکے جانے پر متبادل راستہ استعمال کرنا شروع کر دیا ہے۔اس حوالے سے تھانہ لٹن روڈ میں رابطہ کیا گیا تو انہوں نے بتایا کہ ناکہ سکیورٹی کے حوالے سے لگایا جاتا ہے اس کے علاوہ اس کا کوئی مقصد نہیں ہے۔

مزید : علاقائی