انقلاب والے قوم کی ٹانگیں کھینچ رہے ہیں ، مارشل لا جب بھی آیا تباہی ہی لایا: وزیراعظم

انقلاب والے قوم کی ٹانگیں کھینچ رہے ہیں ، مارشل لا جب بھی آیا تباہی ہی لایا: ...
انقلاب والے قوم کی ٹانگیں کھینچ رہے ہیں ، مارشل لا جب بھی آیا تباہی ہی لایا: وزیراعظم

  


 اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک )وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف نے کہا ہے کہ مارشل لا جب بھی آیا تباہی ساتھ لایا، انقلاب لانے والے قوم کی ٹانگیں کھینچ رہے ہیں۔ وفاقی دارلحکومت میں ویژن 2025 ءکی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ قوم کو تاریکی کی جانب دھکیلنے والے ناکام ہوں گے ، ہمارے دور میں لوڈشیڈنگ کا خاتمہ کر دیا جائے گا،ماضی میں بجلی کی قلت پوری کرنے کے لیے اقدامات نہیں کیے گئے۔ تحریک انصاف کے سربراہ عمران پر تنقید کرتے ہوئے وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ خیبر پختونخوا حکومت بتائے کہ ترقی کے میدان میں کتنا آگے نکل گئی ہے ، پاکستان کی ترقی کی بات کرنے والوں کے ساتھ ہیں۔انھوں نے کہا کہ احتجاج کی باتیں کرنے والے پاکستان کے ساتھ کیا کرنا چاہتے ہیں، اگر ہماری کسی پالیسی میں گڑبڑ ہے تو ہمیں بتاﺅ،پہلے بھی عمران خان کے گھر گیا تھا اور اب بھی جب بلائیں گے تو دوبارہ ان کے گھر جاﺅں گا، جمہوریت کا تسلسل برقرار رہا تو فکر کی کوئی بات نہیں ہوگی ۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ملک کو دہشت گردی کی جنگ میں دھکیلنے والوں کا احتساب ضرور ہونا چاہئے،احتجاج کرنے والے بتائیں کہ وہ کون سا ایجنڈا لے کر آئے،جمہوری سوچ رکھنے والا ہر شہری ملک میں امن اور ترقی چاہتا ہے، دہشت گردی کے خلاف جنگ میں 100 ارب ڈالر کا نقصان برداشت کیا۔وزیر اعظم نے کہا کہ لانگ مارچ ترقیاتی کاموں کو سبوتاژکرتا ہے ،پندرہ سال کی ناکامیوں کا ملبہ ہم پر ڈالنا درست نہیں ہو گا ۔انہوں نے عوامی تحریک کے سربراہ طاہر القادری کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ کچھ لوگ جس طرح کا یہ انقلاب لانا چاہتے ہیں ، میں اس سے اتفاق نہیں کرتا،ملک نے 65 سالوں میں جو دیکھا اور بھگتا ہے، کیا آج بھی ہم اس سے سبق سیکھنے کوتیار نہیں ہیں؟، کینیڈا سے آنے والا شخص کس قسم کا انقلاب لانا چاہتے ہیں؟ ، فسادی کہاں سے اپنا ایجنڈا لے کر آئے ہیں؟۔ وزیر اعظم نے کہا کہ پچھلے دس پندرہ سالوں سے ڈیم بنانے پر کام نہیں ہواتھا تاہم اب ہم بھاشا ڈیم پر کام کر رہے ہیں جو منگلا اور تربیلا سے بڑا ہے،اس دور میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ کا ہمیشہ کے لیے خاتمہ کردیں گے۔ بھارت سے اپنے تعلقات کا ذکر کرتے ہوئے وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ ترقی کے لیے بھارت کے ساتھ تمام مسائل اورمعاملات ایک میز پر بیٹھ کر حل کرنا چاہتے ہیں، ہمارے دور میں پاکستان اور بھارت کی فوجیں آمنے سامنے نہیں آئیں تھیں بلکہ دونوں ممالک کے مابین بس سروس کا آغاز ہواتھا ۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں