بجلی کی قیمتوں میں اضافہ،حکومت نے آئی ایم ایف سے مہلت مانگ لی

بجلی کی قیمتوں میں اضافہ،حکومت نے آئی ایم ایف سے مہلت مانگ لی
 بجلی کی قیمتوں میں اضافہ،حکومت نے آئی ایم ایف سے مہلت مانگ لی

  

اسلام آباد (ویب ڈیسک) پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان تکنیکی سطح کے مذکرات میں اقتصادی ٹیم آئی ایم ایف مشن کو بجلی کی قیمتوں میں فوری طور پر اضافہ نہ کرنے کیلئے قائل کرنے کی کوشش میں مصروف ہے اور آئی ایم ایف مشن کو ملک میں جاری لوڈشیڈنگ اور بعض سیاسی مجبوریوں سے آگاہ کیا گیا ہے۔ وزارت خزنہ کے حکام نے بتایا ہے کہ وفاقی سیکرٹری خزانہ ڈاکٹر وقار مسعود کی سربراہی میں سٹیٹ بینک اور فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) حکام پر مشتمل اقتصادی ٹیم کے آئی ایم ایف مشن کے ساتھ تکنیکی مذاکرات دبئی میں جاری ہیں یہ مذاکرات پاکستان اور عالمی مالیاتی فنڈ کے درمیان مالی سال 2013-14ءکی چوتھی سہ ماہی اپریل تاجون کے اقتصادی جائزے کیلئے 14 اگست تک جاری رہیں گے۔ ذرائع کے مطابق اقتصادی ٹیم نے آئی ایم ایف مشن سے اکتوبر، نومبر تک بجلی مہنگی نہ کرنے کی مہلت مانگی ہے اور مشن کو قائل کیا جارہا ہے کہ پاور سیکٹر کی مد میں دی جانے والی سالانہ کھربوں روپے کی سبسڈی کو بتدریج ختم کرنے کیلئے بجلی کی قیمتوں میں اضافہ کرنا ناگزیر ہے لیکن دو سو یونٹ تک ماہانہ بجلی استعمال کرنے والے صارفین پر مزید بوجھ نہیں ڈالنے کی حکومت متحمل نہیں ہوسکتی۔

مزید : بزنس