بنگلہ دیش میں پولیس مقابلے میں شیروں کا شکار کرنے والے 6 مبینہ شکاری ہلاک

بنگلہ دیش میں پولیس مقابلے میں شیروں کا شکار کرنے والے 6 مبینہ شکاری ہلاک
بنگلہ دیش میں پولیس مقابلے میں شیروں کا شکار کرنے والے 6 مبینہ شکاری ہلاک

  

ڈھاکہ (آئی این پی) جنوب مغربی بنگلہ دیش میں واقع دنیا کے سب سے بڑے مینگروو کے جنگل میں پولیس نے شیروں کا شکار کرنے والے 6 مشتبہ شکاریوں کو ہلاک کر دیا۔

غیر ملکی میڈیاکے مطابق مقامی پولیس کے عہدیدار ہریندر ناتھ سرکار نے بتایا کہ انتظامیہ نے فائرنگ کے تبادلے کے بعد سندربن کے جنگل سے مشتبہ شکاریوں کے گینگ سے تعلق رکھنے والے چھ افراد کی لاشیں دریافت کی ہیں۔دس ہزار اسکوائر کلومیٹر پر پھیلا یہ جنگل بنگلہ دیش اور ہندوستان دونوں ممالک میں پھیلا ہوا ہے اور اسے یونیسکو نے عالمی ثقافتی ورثے میں شامل کررکھا ہے۔ ہریندر ناتھ سرکار کے مطابق انتظامیہ نے مشتبہ افراد کے پاس سے تین بالغ شیروں کی کھالیں اور اسلحہ برآمد کیا ہے۔مقامی میڈیا کے مطابق ان مشتبہ افراد کو ہلاک کرنے سے پہلے جنگل کے مختلف حصوں سے گرفتار کیا گیا تھا مگر پولیس کا کہنا ہے کہ ہلاکتیں چھاپے کے دوران ہوئیں۔

10 سال پہلے سندربن کے جنگل میں شیر کے پیروں کے نشانات کی بنیاد پر کی جانے والی مردم شماری میں ان کی تعداد 440 بتائی گئی تھی تاہم رواں برس ایک نئے سروے میں یہ بات سامنے آئی کہ ٹائیگرز کی کل تعداد 83 سے 130 کے درمیان ہے۔بنگلہ دیشی فارسٹ حکام کا کہنا ہے کہ یہ نیا تخمینہ حقیقت کے زیادہ قریب ہے کیونکہ اس میں کیمروں کا استعمال کیا گیا ہے۔ ان کا اور دیگر ماہرین کا کہنا ہے کہ غیر قانونی شکار شیروں کی آبادی میں کمی کی بڑی وجہ ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -