سکاٹ لینڈ اور آئرلینڈ کی ٹیموں نے پاکستان آنے کی یقین دھانی کروائی ہے ، شہریار خان

سکاٹ لینڈ اور آئرلینڈ کی ٹیموں نے پاکستان آنے کی یقین دھانی کروائی ہے ، ...

  

 لاہور( سپورٹس رپورٹر) چیئرمین پاکستان کرکٹ بورڈ شہریار خان نے کہا ہے کہ زمبابوے نے دورہ کرکے پاکستان انٹرنیشنل کرکٹ میچز کھیلنے کی بنیاد ڈالی ہے ، اب ہمیں فل ممبر کرکٹ ٹیم کو پاکستان آنے پر دباؤ ڈالنے کی ضرورت نہیں ، پاکستان آنے کا فیصلہ انہیں خود کرنا ہے ، بھارتی کرکٹ بورڈ کے ساتھمعاہدے پر چند معاملات پر بات چیت چل رہی ہے ، سری لنکا کے خلاف ٹی ٹوئنٹی سیریز میں سرفراز کو ڈراپ کرنے پر کوچ وقار یونس سے سے پوچھیں گے وکٹ کیپر بلے باز کو کیوں ڈراپ کیا گیا۔ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین شہریار خان نے کہا کہ سکاٹ لینڈ یارڈ اور آئرلینڈ ٹیموں نے پاکستان آنے کی یقین دہانی کرائی ہے زمبابوے کرکٹ ٹیم ایک بار آچکی ہے اس کے بعد غیر ملکی کرکٹ ٹیموں کا اعتماد بحال ہوچکا ہے ہم دوسری ٹیموں کو دباؤ میں نہیں لائینگے ان کو اب خود فیصلے کرنا ہے ۔ ایسوسی ایٹ کرکٹ ٹیم ہانگ کانگ اور عمان کی ٹیمیں پاکستان آنے کو بھی تیار ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ امید ہے کہ پاکستان میں کرکٹ کھیلنے کے دروازے آہستہ آہستہ کھولتے جائینگے پاکستان میں سکیورٹی کی صورتحال گزشتہ چھ ماہ میں بہتر ہوچکی ہے اور آئندہ چند مہینوں میں بہت بہتری آجائے گی ۔ شہریار خان نے کہا کہ غیر ملکی کرکٹ ٹیمیں کراچی سے زیادہ لاہور کو زیادہ محفوظ سمجھتا ہے انہوں نے کہا کہ کینیا ، افغانستان اور زمبابوے کی کرکٹ ٹیمیں پاکستان کا دورہ کرچکی ہیں فرروری اور مارچ میں ممبئی میں چیمپئن شپ شروع ہورہی ہے ۔ بی سی سی آئی کے ساتھ معاہدے پر ایک دو معاملات پر بات چیت چل رہی ہے ۔ بی سی سی آئی کیلئے پاکستان بھارت سیریز کیلئے حکومت سے اجازت درکار ہے جبکہ بھارتی حکومت کی اجازت کے بغیر بھی ان کی ٹیم پاکستان نہیں آسکتی ان کا کہنا تھا کہ ہم معاہدے پر قائم ہیں اور بھارتی حکومت کے اجازت کے منتظر ہیں ۔ ا یک سوال کے جواب میں شہریار خان نے کہا کہ دورہ سری لنکا کے دوران ٹی 20فارمیٹ میں سرفراز کو نہ کھلانے پر حیرانگی ہوئی اس حوالے سے کوچ اور کپتان سے بات کرینگے وجوہات جاننے کی کوشش کرینگے کیونکہ اس حوالے سے میڈیا اور عوام کا بھی شدید دباؤ ہے ۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -