اسسٹنٹ کمشنرز کو لینڈ ریکارڈ سینٹرز کی روزانہ مانیٹرنگ کا پابند بنا دیا گیا

اسسٹنٹ کمشنرز کو لینڈ ریکارڈ سینٹرز کی روزانہ مانیٹرنگ کا پابند بنا دیا گیا

  

لاہور(اپنے نمائندے سے)روزنامہ پاکستان کی خبر پر نوٹس،سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو پنجاب نے صوبے بھر میں اسسٹنٹ کمشنر ز کو رو زانہ لینڈ ریکارڈ انفارمیشن سسٹم سروس سنٹر کی مانیٹرنگ اور انسپکشن کرنے کا پابند کر دیا،ااضافی ڈیوٹیوں اور مصروفیات کی وجہ سے اسسٹنٹ کمشنرز کو دی جانے والی چیئرمین شپ اور بنائی جانے والی کمیٹیاں عملی طور پر غیر فعال ہو گئی تھیں ،معلومات کے مطابق سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو نے لینڈ ریکارڈ انفارمیشن سسٹم سروس سنٹرز کی مانیٹرنگ کے متعلق پنجاب بھر کے اسسٹنٹ کمشنرز کی عدم دستیابی کے متعلق گزشتہ روز روزنامہ پاکستان میں شائع ہونے والی خبر کا نوٹس لیتے ہوئے تمام اسسٹنٹ کمشنر ز کو پابند کر دیا ہے کہ وہ روزانہ کم از کم ایک گھنٹہ سروس سنٹر کی مانیٹرنگ،انسپکشن اور ریکارڈ کا جائز ہ لیں گے اور سائلین کو درپیش مشکلات کا فوری ازالہ کریں گے ،اس سے قبل ریکارڈ کی درستگی اور انسپکشن کے لئے اسسٹنٹ کمشنر ز کے زیر نگرانی بنائی جانے والی کمیٹیاں عملی طور پر غیر فعال ہو چکی تھیں کیونکہ سیلاب کی صورتحال لے پیش نظر اضافی ڈیوٹیوں ،جمعبندیوں کی میٹنگز اور سیٹلمنٹ کی تکمیل میں مصروف ہونے کی وجہ سے کوئی بھی اسسٹنٹ کمشنر سروس سنٹر کی مانیٹرنگ اور انسپکشن کے لئے دستیاب نہ تھا جس کی وجہ سے سائلین کو مشکلات کے ساتھ بروقت ہونے والے کاموں کو بھی کئی ماہ تک لٹکانے کا سلسلہ جاری تھا ، شہری محمد احمد ،امجد پرویز،عباس علی اور محمد عاطف نے کہا کہ سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو کا یہ ایک احسن اقدام ہے جس کا براہ راست فائدہ سائلین کو حاصل ہو گا سائل احسان علی،شعیب مغل،حسیب اسلم او ر خرم شہزاد نے کہا کہ لینڈ ریکار ڈ انفارمیشن سسٹم سروس سنٹر ز پنجاب حکومت کا ایک عوام دوست پروگرام ہے جس کو صرف افسران کی نااہلی اور عدم توجہ کے باعث عوام دشمن بنادیا گیا ہے سینئر ممبر بورڈ آ ف ریونیو کے اسسٹنٹ کمشنرز کو روزانہ کی بنیاد پر سروس سنٹرز کی انسپکشن اور مانیٹرنگ کے احکامات کی وجہ سے سائلین کو ریکارڈ اور اپنی جائیدادوں سے متعلق پیش آمدہ مسائل سے نجات ملے گی ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -