لاہور اورنج میٹرو ٹرین منصوبہ ٹرانسپورٹ کلچر میں انقلابی تبدیلی لائے گا ، شہباز شریف

لاہور اورنج میٹرو ٹرین منصوبہ ٹرانسپورٹ کلچر میں انقلابی تبدیلی لائے گا ، ...

  

 لاہور(جنرل رپورٹر) وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف کی زیر صدارت یہاں پنجاب ماس ٹرانزٹ اتھارٹی کا ساتواں اجلاس منعقد ہوا۔اجلاس کے دوران لاہور اورنج لائن میٹرو ٹرین کے منصوبے پر عملدر آمد سے متعلقہ اہم امور کی متفقہ طور پر منظوری دی گئی۔اجلاس میں پنجاب ماس ٹرانزٹ اتھارٹی کے مالی سال 2015-16 ء کے بجٹ کے تخمینہ جات کی بھی منظوری دے دی گئی ۔وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ لاہور اور پاکستان میٹرو بس پراجیکٹس نے ٹرانسپورٹ نظام میں نئی جہتیں متعارف کرائی ہیں اوراب ملتان میں بھی میٹروبس منصوبے پر کام کا آغاز کر دیا گیا ہے جبکہ لاہور میں اورنج لائن میٹرو ٹرین کا منصوبہ شروع کیا جا رہا ہے جو پاکستان میں اپنی نوعیت کا پہلا پراجیکٹ ہوگا۔لاہور اورنج لائن میٹرو ٹرین ٹرانسپورٹ کلچر میں انقلابی تبدیلی کا پیش خیمہ ثابت ہوگا۔انہوں نے کہا کہ جدید ٹرانسپورٹ کا نظام تیز رفتار ترقی کی بنیاد ہے،اسی لئے پنجاب حکومت ذرائع نقل و حمل کو بہتر بنانے پرخصوصی توجہ مرکوزکیے ہوئے ہے۔انہوں نے کہاکہ لاہور اور پاکستان میٹرو بس پراجیکٹس کیلئے فیڈر روٹس پر نئی بسیں چلائی جائیں گی،جس سے شہریوں کو میٹروبس سٹیشنز تک آنے جانے میں سہولت ملے گی جبکہ ملتان میٹروبس پراجیکٹ مکمل ہونے پروہاں بھی فیڈر روٹس پر بسیں چلائی جائیں گی۔ وزیراعلیٰ نے اس ضمن میں لاہور، پاکستان اور ملتان میٹرو پراجیکٹس کیلئے علیحدہ علیحدہ سٹیئرنگ کمیٹیاں تشکیل دینے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ فیڈرروٹس پر بسیں چلانے کے حوالے سے فوری اقدامات کیے جائیں۔اجلاس کے دوران اورنج لائن میٹرو ٹرین کے منصوبے کے ہارٹیکلچر اور لینڈ سکیپنگ کا کام پی ایچ اے کے سپرد کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ لاہوراور پاکستان میٹروبس منصوبے کے روٹس پر کمرشل پوائنٹس کو ڈویلپ کرنے کا جائزہ لیا جائے۔انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت نے میٹروبسوں کے ذریعے معاشرے کے ہر طبقے کیلئے باکفایت،آرام دہ اورتیزرفتار ٹرانسپورٹ فراہم کی ہے جبکہ لاہور اورنج لائن میٹرو ٹرین کا منصوبہ ان منصوبوں کو مزید آگے بڑھانے کی جانب ایک سنگ میل ہے۔انہوں نے کہا کہ میٹروبس پراجیکٹس عوام کے وسائل ان پر صرف کرنے کی شاندار مثالیں ہیں اورعوام نے میٹروبس پراجیکٹس کو جتنی پذیرائی دی ہے اس کی نظیر نہیں ملتی۔وزیراعلیٰ نے پاکستان میٹرومنصوبے کے حوالے سے حنیف عباسی اورکمشنر راولپنڈی ڈویژن کی کارکردگی کو سراہاجبکہ اورنج لائن میٹروٹرین کے منصوبے سے اہم امور کوطے کرنے کے حوالے سے خواجہ احمد حسان،چیف سیکرٹری،ایم ڈی پنجاب ماس ٹرانزٹ اتھارٹی،ڈی جی ایل ڈی اے اوردیگر متعلقہ حکام کی کارکردگی کی بھرپور ستائش کی۔چےئرمین لاہور ٹرانسپورٹ کمپنی خواجہ احمد حسان نے میٹروبس پراجیکٹس اور لاہور اورنج لائن میٹروٹرین کے منصوبے کے حوالے سے وزیراعلیٰ شہبازشریف کی انتھک محنت اورویژن کوشاندار الفاظ میں خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ عوام کی خدمت کیلئے آپ نے جو کام کیے ہیں اس کی مثال نہیں ملتی، خصوصاً لاہور اورنج لائن میٹروٹرین کے منصوبے کے حوالے سے چین میں جس طرح آپ نے پنجاب کے عوام کیلئے یہ تحفہ حاصل کیا اس کی گواہی نہ صرف پاکستان کے عوام دیتے ہیں بلکہ چین کے اعلی حکام بھی آپ کے معترف ہیں۔اجلاس کے دوران اراکین اسمبلی نے کہا کہ وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے عوام کی سہولت کیلئے جدید ٹرانسپورٹ نظام متعارف کراکے ان کے دل جیت لئے ہیں اورروزانہ لاکھوں افراد میٹرو بس پراجیکٹس سے مستفید ہو رہے ہیں۔ مینجنگ ڈائریکٹر پنجاب ماس ٹرانزٹ اتھارٹی نے اجلاس کے دوران بریفنگ دی۔ اراکین قومی اسمبلی ملک ابرار احمد، وحید عالم خان، چیئرمین لاہور ٹرانسپورٹ کمپنی خواجہ احمد حسان، سابق ایم این اے حنیف عباسی، اراکین صوبائی اسمبلی خواجہ عمران نذیر، رمضان صدیق بھٹی، سابق ایم پی اے حافظ میاں محمد نعمان، وائس چیئرمین پی ایچ اے افتخار احمد، متعلقہ سیکرٹریزاور اعلیٰ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف کی زیر صدارت یہاں اعلیٰ سطح کا اجلاس منعقد ہوا ،جس میں صوبے میں امن عامہ ، نیشنل ایکشن پلان کے تحت اٹھائے گئے اقدامات پر پیشرفت اورقصور واقعہ کے تناظر میں صورتحال کا تفصیلی جائزہ لیا گیا۔وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ قصور واقعہ میں ملوث ملزمان کڑی سے کڑی سزا سے نہیں بچ پائیں گے اور اس گھناؤنے فعل کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے ۔ ملزمان قانون کے تحت عبرتناک سزا کے حقدار ہیں ۔انہوں نے کہاکہ ظالم اپنے کئے کی سزا ضرور پائیں گے اور جن ملزمان نے یہ گھناؤنا فعل کیاہے وہ قانون کے مطابق عبرتناک انجام سے بچ نہیں پائیں گے ۔ وزیراعلیٰ نے صوبہ بھر میں عوام کے جان ومال کے تحفظ کے لئے سکیورٹی کے فول پروف انتظامات کی ہدایت کرتے ہوئے کہاکہ عوام کے جان ومال کے تحفظ کے لئے ہر ممکن اقدام اٹھایا جائے اور یوم آزادی کی تقریبات کے حوالے سے قانون نافذ کرنے والے ادارے چوکس رہیں۔انہوں نے کہا کہ مساجد، امام بارگاہوں ، گرجا گھروں اور دیگرعبادت گاہوں کی سکیورٹی کو ہرصورت فول پرو ف بنایا جائے ۔ سکیورٹی انتظامات پر کوئی کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی۔کابینہ کمیٹی برائے امن وامان سکیورٹی انتظامات کے حوالے سے فعال اور متحرک کردار ادا کرے۔انہوں نے کہاکہ متعلقہ ادارے انٹیلی جنس شیئرنگ کے حوالے سے قریبی کوآرڈینیشن جاری رکھیں۔ لاؤڈ سپیکر پر پابندی کے قانون پر سختی سے عملدرآمد کرایا جائے ۔وال چاکنگ پر پابندی اور مذہبی منافرت پر مبنی لٹریچر کی اشاعت و تقسیم روکنے کے حوالے سے قوانین پر موثر انداز میں عملدرآمد ہونا چاہیے ۔ انہوں نے کہاکہ کالعدم تنظیموں اور انہیں مالی معاونت فراہم کرنے والوں کے خلاف بلاامتیاز کریک ڈاؤن کیا جائے اور کسی بھی کالعدم تنظیم کو چندہ جمع کرنے کی اجازت نہیں ہوگی، اس طرح کالعدم تنظیموں کی سرگرمیوں کا پوری قوت سے قلع قمع کیا جائے گا۔نیشنل ایکشن پلان کے تحت ا ٹھائے گئے اقدامات تسلسل کے ساتھ جاری رکھے جائیں ۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ نیشنل ایکشن پلان ملک سے دہشت گردی کے خاتمے کیلئے قومی عزم کا عکاس ہے اور پوری قوم ملک سے دہشت گردی کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنے کا عزم کر چکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاک افواج کا دہشت گردوں کے خلاف کامیاب آپریشن ضرب عضب پوری قوت سے جاری ہے اور اس آپریشن کے ذریعے دہشت گردوں پر کاری ضرب لگائی گئی ہے۔ آپریشن ضرب عضب کے ذریعے وطن اور امن کے دشمنوں کو کیفر کردار تک پہنچایا جا رہا ہے۔ پاک افواج نے دہشت گردوں کے خلاف جنگ میں جرأت اور بہادری کی نئی تاریخ رقم کی ہے۔پاک افواج، پولیس ، سکیورٹی اداروں کے افسران و اہلکاران کے علاوہ قوم کے بچوں سمیت معاشرے کے ہر طبقے نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں لازوال قربانیاں دی ہیں۔ دہشت گردی کے خلاف جنگ ملک کی بقا کی جنگ ہے اورپوری قوم پاک افواج کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملک سے آخری دہشت گرد کے خاتمے تک جنگ جاری رہے گی۔ ملک کو دہشت گردوں کے ناپاک وجود سے پاک کرکے دم لیں گے اور دہشت گردی کے خلاف جنگ کو منطقی انجام تک پہنچائیں گے۔ دہشت گردوں اور ان کے سہولت کاروں کو پاکستان میں سر چھپانے کی جگہ نہیں ملے گی اور انہیں کیفر کردار تک پہنچا کر دم لیں گے۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت نے نیشنل ایکشن پلان کے تحت انسداد دہشت گردی کے حوالے سے موثر اقدامات کئے ہیں۔ اجلاس میں نیشنل ایکشن پلان کے تحت پنجاب میں انسداد دہشت گردی کیلئے اقدامات پر اطمینان کا اظہار کیا گیا اور دہشت گردوں اور ان کے سہولت کاروں کے خلاف حالیہ کامیاب کارروائیوں پر پنجاب حکومت اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کی کارکردگی کو سراہا گیا۔اجلاس میں صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اﷲ، ا نسپکٹر جنرل پولیس پنجاب ، سیکرٹریز داخلہ،قانون، پبلک پراسیکیوشن ، اطلاعات اور متعلقہ حکام نے شرکت کی ۔

لاہور(جنرل رپورٹر)وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف کی زیرصدات یہاں اعلی سطح کا اجلاس منعقد ہوا،جس میں ہسپتالوں میں طبی سہولیات کی بہتری اورپنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی لاہورکے امورکا جائزہ لیاگیا۔وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہعام آدمی کو جدیداور معیاری طبی سہولتوں کی فراہمی ہماری سرفہرست ترجیح ہے۔صحت عامہ کی سہولتوں کی بہتری کیلئے وسائل کی کمی نہیں آنے دیں گے۔انہوں نے کہا کہ پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی امراض قلب میں مبتلا مریضوں کو علاج معالجہ کی فراہمی کے حوالے سے اہم ادارہ ہے۔ادارہ جس مقصد کیلئے بنایا گیا تھا اس کے اسی معیار کوہر صورت بحال کرناہے ۔ پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں نہ صرف پنجاب بلکہ دوسرے صوبوں کے لوگ بھی علاج معالجہ کیلئے آتے ہیں ۔وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی کا بورڈ آف مینجمنٹ ادارے میں طبی سہولیات کی مزیدبہتری کیلئے آئندہ سات روز میں جامع پلان مرتب کر کے پیش کرے۔پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی لاہورکوایک مضبوط ادارہ بنانے کیلئے تمام ضروری اقدامات اٹھائے جائیں اورپروفیشنل سوچ کے ساتھ ادارے کی بہتری اوراس کے امیج کی بحالی کیلئے اقدامات کیے جائیں۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ فرینڈز آف پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی ٹرسٹ کی جانب سے ہسپتال میں 100بستروں کے نئے ایمرجنسی بلاک کی تعمیرسے مریضوں کو سہولتیں میسرآئیں گی۔انہوں نے کہا کہ مخیر حضرات کے تعاون سے تعمیر ہونے والاایمرجنسی کا نیا بلاک عظیم کارخیر ہے۔دکھی انسانیت کی خدمت عبادت اوراللہ تعالیٰ کی خوشنودی حاصل کرنے کا ذریعہ ہے۔انہوں نے کہا کہ صوبے بھر کے ہسپتالوں میں طبی سہولتوں کو بہتر سے بہتر بنایا جائے ۔اداروں کی کارکردگی کو بہتربنانے کیلئے چیک اینڈ بیلنس کا موثر نظام بھی ضروری ہے ۔فرینڈز آف پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی ٹرسٹ کے عامر فیاض نے ہسپتال میں زیرتعمیر نئے ایمرجنسی بلاک پر پیش رفت سے آگاہ کیااورانہوں نے بتایاکہ 100بستروں پر مشتمل نئے ایمرجنسی بلاک کے منصوبہ پر تیزی سے کام جاری ہے ۔پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی کے چیف ایگزیکٹو آفیسرنے ادارے کی بہتری کیلئے اٹھائے گئے اقدامات بارے تفصیلی بریفنگ دی۔مشیر صحت خواجہ سلمان رفیق ،چےئرمین لاہورٹرانسپورٹ کمپنی خواجہ احمد حسان،پارلیمانی سیکرٹری برائے صحت خواجہ عمران نذیر،ممبر پنجاب اسمبلی ڈاکٹر نادیہ عزیز،ایم پی اے وممبر بورڈ آف مینجمنٹ آف پی آئی سی مسز طحہ نون، سیکرٹریز صحت،خزانہ ، وائس چانسلر کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی پروفیسر فیصل مسعود اورمتعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔ وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ صوبے کے عوام کو پینے کے صاف پانی کی فراہمی کا منصوبہ انتہائی اہمیت کا حامل ہے اوراربوں روپے کے اس منصوبے کا تعلق براہ راست عوام کی صحت سے جڑا ہوا ہے۔منصوبے کے تحت 2017ء تک پنجاب کی اکثریتی آبادی تک پینے کے صاف پانی کی فراہمی کا ہدف مقرر کیا گیا ہے۔صاف پانی پراجیکٹ کا دائرہ کار مرحلہ وار پروگرام کے تحت پورے صوبے میں پھیلایا جائے گا۔پینے کاصاف پانی ہر شہری کا بنیادی حق ہے اور پنجاب حکومت صاف پانی پراجیکٹ جیسے فلاحی منصوبے شروع کر کے یہ حق انہیں دے گی۔وہ آج یہاں اعلیٰ سطح کے اجلاس کی صدارت کر رہے تھے جس میں پنجاب صاف پانی پراجیکٹ کے مختلف امور پر پیش رفت کا جائزہ لیا گیا۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ اربوں روپے کا پینے کے صاف پانی کا منصوبہ عام آدمی کیلئے ہے۔ انہوں نے کہا کہ منصوبے پر عملدرآمد کے دوران معیار پر خصوصی توجہ دی جائے اور منصوبے کو تیز رفتاری سے آگے بڑھایا جائے اور تمام متعلقہ ادارے مربوط کوآرڈینیشن کے ساتھ کام کریں۔ انہوں نے کہا کہ عوام کو پینے کے صاف پانی کی فراہمی کے منصوبے پر عملدرآمد میں کوئی سستی نہیں ہونی چاہیئے اورفلٹریشن پلانٹس کی دیکھ بھال کی ذمہ داری متعلقہ کمپنی کی ہونی چاہیئے۔ انہوں نے کہا کہ منصوبے میں کمیونٹی کی شرکت سے روزگار کے مواقع بھی میسر آئیں گے اورتھرڈ پارٹی آڈٹ کے تحت ہر کام کی باقاعدہ چیکنگ ہوگی۔انہوں نے کہاکہ غیر فعال واٹر سکیموں کو چالو کرنے کیلئے فوری اقدامات کئے جائیں۔ وزیراعلیٰ نے پنجاب صاف پانی کمپنی کے نئے چےئرمین ایم پی اے کاشف پڈھیار کوہدایت کی کہ محنت، دیانت، امانت اور ایمانداری سے فرائض سرانجام دیں اور صوبے کے عوام کو صاف پانی کی فراہمی کے منصوبے کو تیزرفتاری سے آگے بڑھائیں۔اجلاس میں نئے چیئرمین پنجاب صاف پانی کمپنی کاشف پڈھیار، چیئرمین منصوبہ بندی و ترقیات، سیکرٹری ہاؤسنگ، چیف ایگزیکٹو آفیسر پنجاب صاف پانی کمپنی اور متعلقہ حکام نے شرکت کی۔

مزید :

صفحہ اول -