زید حامدقونصلر رسائی مل جانے سے معاملہ جلد حل ہو جائے گا ، سرتاج عزیز

زید حامدقونصلر رسائی مل جانے سے معاملہ جلد حل ہو جائے گا ، سرتاج عزیز

  

اسلام آباد (این این آئی) مشیر برائے خارجہ امور سرتاج عزیز نے قومی اسمبلی کو بتایا ہے کہ زید حامد کے معاملے پر ہمارا سفارتخانہ سعودی حکام سے مستقل رابطے میں ہے تاہم ابھی تک قونصلر رسائی نہیں ملی ،خدا کرے کہ جلدی قونصلر رسائی مل جائے اور معاملہ حل ہو جائے ۔ پیر کو وقفہ سوالات کے دور ان ایک ضمنی سوال کے جواب میں مشیر خارجہ نے بتایا کہ زید حامد کی اہلیہ سے دو مرتبہ ملاقات ہو چکی ہے انہیں خرچ کیلئے رقم کی ضرورت تھی وہ بھی فراہم کر دی گئی ہے انہوں نے بتایا کہ ابھی تک زید حامد کو اسیر کر نے کے بارے میں کچھ معلوم نہیں ہوا تاہم لگتا ہے کہ زید حامد کے بیانات پر الزامات ہیں ۔مراد سعید کے سوال کے جواب میں انہوں نے بتایا کہ کویتی حکام سر کاری طورپر ویزا جاری کر نے کیلئے کسی پابندی یا پابندی عائد کر نے کو تسلیم نہیں کر تے تاہم منشیات کا کارو بار کر نے پر متعدد پاکستانی افراد کی گرفتاریاں اور امن وامان کی عمومی بگڑتی ہوئی صورتحال کے پیش نظر 2011سے ویزا محدود پیمانے پر جاری کیا جارہا ہے، حکومت پاکستان کویتی حکام سے رابطہ میں ہے جبکہ پیشہ ور افراد کو ملازمت کی صورت میں ویزا دیا جارہا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ اس وقت کویت میں 240پاکستانی قید ہیں جس پر منشیات کی سمگلنگ ٗ قتل ٗ زنا بالجبر ٗ چوری اور جعلسازی کے مقدما ت ہیں ان میں سے 221سزا یافتہ ہیں جبکہ 19کے مقدمات زیر سماعت ہیں۔ نعیمہ کشور خان کے سوال کے جواب میں وزیر امور کشمیر محمد برجیس طاہر نے بتایا کہ سال 1969سے آزاد جموں وکشمیر میں کیمپوں میں رہنے والے مردو خواتین اور بچوں کی کل تعداد 36671ہے جو کہ 6835خاندان صحت ٗ تعلیم ٗ رہائش فراہم کر نے کی بنیادی ذمہ داری حکومت آزاد کشمیر پر عائد ہوتی ہے جس کیلئے وفاقی حکومت ایک خطیر رقم مختص کرتی ہے۔ وزیر اعظم آزاد کشمیر کی سفارش پر گزارہ الاؤنس میں بیس فیصد کا اضافہ وفاقی حکومت کے زیر غور ہے، خالدہ منصور کے سوال کے جواب میں وفاقی وزیر ریاض حسین پیر زادہ نے بتایا کہ گزشتہ پانچ برسوں کے دور ان حکومت نے پاکستان فٹ بال فیڈریشن کو چار کرو ڑ46لاکھ روپے کی گرانٹ دی ہے جبکہ ہاکی فیڈریشن کو 43کروڑ 62لاکھ 67ہزار 243روپے کی گرانٹ دی گئی ۔ایک سوال کے جواب میں وزیر سیفران لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ عبد القادر بلوچ کی طرف سے ایوان کو بتایا گیا کہ اس وقت پاکستان میں 25لاکھ سے زائد افغانی رہائش پذیر ہیں جن میں سے 15لاکھ 36ہزار رجسٹرڈ اور تقریباً دس لاکھ غیر رجسٹرڈ ہیں 2014کے دور ان 12991اور رواں سال 25جولائی تک 45205رجسٹرڈ افغانی واپس افغانستان بھیجے گئے ہیں۔ منزہ حسن کے سوال کے جواب میں وزیر تجارت خرم دستگیر خان کی طرف سے بتایا گیا کہ گزشتہ پانچ برسوں کے دور ان پاکستان نے مسلم ممالک کے ساتھ کسی ایف ٹی اے پر دستخط نہیں کئے اس عرصے کے دور ان پاکستان اور اندونیشیا کے درمیان ترجیحی تجارتی معاہدے پر دستخط ہوئے تھے جو 2013میں فعال ہوگیا تھا انہوں نے بتایا کہ پاکستان کو پی ٹی اے پر دستخط سے قبل بھی انڈونیشیا کے ساتھ تجارتی خسارے کا سامنا رہا ہے جو بدستورجاری ہے ۔تجارتی خسارے کی بنیادی وجہ انڈونیشیا سے بڑی مقدار میں پام آئل کی درآمد ہے پام آئل کی کل در آمد کا 52فیصد انڈونیشیا سے در آمد کیا گیا تھا انہوں نے بتایا کہ وزارت تجارت پاکستان انڈونیشیا پی ٹی اے جائزہ اجلاس بلانے کا پروگرام بنا رہی ہے بر آمدات میں اضافہ کر نے اور تجارتی خسارے کو کم کر نے کی غرض سے انڈونیشیا کی منڈیوں میں پاکستانی مصنوعات کی پہلے سے زیادہ رسائی کیلئے کوششیں کی جائیں ۔

مزید :

علاقائی -