کن 5 ممالک میں بچوں کو سب سے زیادہ جنسی تشدد کا نشانہ بنایا جاتا ہے؟ قصور سکینڈل کے بعد پاکستان پر مسلسل تنقید کرنے والے یہ خبر ضرور پڑھ لیں

کن 5 ممالک میں بچوں کو سب سے زیادہ جنسی تشدد کا نشانہ بنایا جاتا ہے؟ قصور ...
کن 5 ممالک میں بچوں کو سب سے زیادہ جنسی تشدد کا نشانہ بنایا جاتا ہے؟ قصور سکینڈل کے بعد پاکستان پر مسلسل تنقید کرنے والے یہ خبر ضرور پڑھ لیں

  

لندن (نیوز ڈیسک) قصور میں بچوں کے ساتھ زیادتی کے گھناؤنے جرائم کی خبر سامنے آئی تو جہاں ساری قوم نے بڑے پیمانے پر اصلاح احوال کی ضرورت پر زور دیا وہیں پاکستان کے دشمنوں نے اس افسوسناک سانحے کو بھی پاکستان کے خلاف پراپیگینڈا کا ذریعہ بنا لیا۔ پاکستان کے خلاف پراپیگینڈا کرنے والے بھارت جیسے ممالک کی اپنی حقیقت کیا ہے اس کا اندازہ برطانوی اخبار انٹر نیشنل بزنس ٹائمز (IBTimes)کی تازہ ترین رپورٹ سے بخوبی لگایا جاسکتا ہے۔ اس رپورٹ کے مطابق بچوں پر جنسی تشدد کے حوالے سے 5بد ترین ممالک یہ ہیں۔

1۔ جنوبی افریقہ:-

اس ملک میں آج سے پانچ سال قبل بھی حالات یہ تھے کہ ہر تین منٹ بعد ایک بچے سے جنسی زیادتی ہورہی تھی۔ گیارہ سال سے زائد عمر کے 11فیصد لوگوں کا خیال تھا کہ جنسی زیادتی کوئی جرم نہیں۔

2۔بھارت:-

ایشیئن سنٹر فار ہیومن رائٹس کی رپورٹ کے مطابق بھارت میں 2001سے 2011کے درمیان بچوں کے ساتھ جنسی زیادتی میں 336فیصد اضافہ ہوا اور کل 48000سے زائد بچوں کو درندگی کا نشانہ بنایا گیا۔

3۔زمبابوے:-

زمبابوے میں 2011میں 3172بچوں کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا جبکہ 2010میں یہ تعداد 2883 تھی۔ دارالحکومت ہرارے کا صرف ایک کلینک جنسی زیادتی کے شکار 30ہزار بچوں کو طبی مدد فراہم کرچکا ہے۔

4۔برطانیہ:-

سکاٹ لینڈ یارڈ کی ایک رپورٹ کے مطابق برطانیہ میں اڑھائی لاکھ سے زائد افراد بچوں سے زیادتی کے عادی مجرم ہیں۔ 2013میں انگلینڈ اور ویلز میں بچوں کے ساتھ زیادتی کے 18195واقعات ریکارڈ کئے گئے۔

5۔امریکا:-

چلڈرن اسیسمنٹ سنٹر (CAC)کی رپورٹ کے مطابق امریکا میں 25فیصد لڑکیوں اور 17فیصد لڑکوں کو 18سال کی عمر کو پہنچنے سے پہلے ہی بے آبرو کردیا جاتا ہے۔ 2014میں 14 سے 17سال عمر کے بچوں میں سے 28فیصد جنسی درندگی کا نشانہ بنے۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے کلک کریں

آئی فون ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے کلک کریں

مزید :

ڈیلی بائیٹس -