پی آئی ٹی بی میں قائم پنجاب کا ڈیٹا سنٹر 3ہزارسرورز پر مشتمل ہے،ڈاکٹر عمر سیف

پی آئی ٹی بی میں قائم پنجاب کا ڈیٹا سنٹر 3ہزارسرورز پر مشتمل ہے،ڈاکٹر عمر سیف

  

لاہور(خبرنگار) چیئرمین پنجاب آئی ٹی بورڈ ڈاکٹر عمر سیف نے کہا ہے کہ پی آئی ٹی بی میں قائم پنجاب کا ڈیٹا سنٹر 3ہزارسرورز پر مشتمل ہے جو بورڈ آف ریونیو، لینڈ ریکارڈ مینجمنٹ اور سکولوں و ہسپتالوں سمیت تمام صوبائی محکموں کا کمپیوٹرائزڈ ڈیٹا محفوظ کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔وہ گذشتہ روز چیئرمین محکمہ پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ کے چیئرمین محمد جہانزیب خان کے دورہء پی آئی ٹی بی کے موقع پر بریفنگ دے رہے تھے۔ سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو جواد رفیق ملک ، ڈی جی ای گورننس ساجد لطیف اور ڈائریکٹر آئی ٹی انفرا سٹرکچر سجاد غنی بھی اس موقع پر موجود تھے۔ ڈاکٹر عمر سیف نے کہا کہ حکومتی امور کو کمپیوٹرائزڈ بنانے کے لئے ڈیٹا سنٹرکاکردار نہائت اہم ہے۔حکومتی دفاتر اور محکموں کے بھاری بھرکم ڈیٹا اور مفید معلومات کو اکٹھا کرے گا۔ بلکہ جہاں ضرورت ہوگی دیگر حکومتوں، دفاتر یانجی کمپنیوں مثلاً بینکوں کو بھی فراہم کر سکے گا۔

بلکہ جہاں ضرورت ہوگی دیگر حکومتوں، دفاتر یانجی کمپنیوں مثلاً بینکوں کو بھی فراہم کر سکے گا۔ انہوں نے کہا کہ صوبے میں ای۔گورننس کو فروغ دینے کے لئے بھی اس ڈیٹا سنٹر کا کلیدی کردار ہو گا۔ڈاکٹر عمر سیف نے چیئرمین پی اینڈ ڈی کو ڈیٹا سنٹر کے مختلف حصے دکھائے اور انکے افعال پر روشنی ڈالی۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب کو یہ بھی اعزاز حاصل ہے کہ اس نے شفافیت کو یقینی بناتے ہوئے ملک بھر میں سب سے پہلے پنجاب کے53ہزار سرکاری سکولوں کا ڈیٹا عوام کے لئے اوپن کر دیا ہے جس سے نہ صرف عام آدمی اپنے بچے اور استاد کی کارکردگی گھر بیٹھے دیکھ سکتا ہے بلکہ اعلیٰ حکام کو پالیسی سازی میں بھی ٹھوس راہنمائی ملتی ہے۔چیئرمین پی اینڈ ڈی نے ڈاکٹر عمر سیف اور انکی ٹیم کی کاوشوں کو سراہا اور گڈ گورننس میں پی آئی ٹی بی کے کردار کو مثالی قرار دیا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -