جھگیوں میں رہنے والی بچی نے اپنی محنت سے ثابت کر دیا تعلیم کسی کی میراث نہیں ، شہباز شریف

جھگیوں میں رہنے والی بچی نے اپنی محنت سے ثابت کر دیا تعلیم کسی کی میراث نہیں ...

  

 لاہور(جنرل رپورٹر)وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف سے چکوال کے گاؤں فتوحی میں جھگیوں میں رہنے والی ہونہار طالبہ نرگس گل نے ملاقات کی۔وزیر اعلی نے راولپنڈی بورڈ کے تحت میٹرک امتحانات میں سائنس مضامین میں 1004 نمبر لینے پر طالبہ نرگس گل کو مبارکباددی اور جھگیوں میں رہنے والی اس ہونہار طالبہ کو پنجاب حکومت کی جانب سے مفت گھر دینے کا اعلان کیا۔وزیر اعلی نے طالبہ نرگس گل کو 5 لاکھ روپے کا چیک اور لیپ ٹاپ بھی دیا۔وزیر اعلی نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ طالبہ لاہور یا چکوال جہاں چاہے گی اسے مفت گھر لیکر دیں گے اور اس کے تمام تعلیمی اخراجات پنجاب حکومت برداشت کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ 5 لاکھ روپے سے حاصل ہونے والی آمدن طالبہ نرگس گل اور ان کے خاندان کی رو زمرہ اخراجات کیلئے ہے جبکہ پنجاب حکومت طالبہ نرگس گل کے تعلیمی اخراجات اس کے علاوہ خود برداشت کرے گی۔انہوں نے کہا کہ طالبہ نرگس گل نے مشکل حالات میں اپنی محنت کی بدولت سائنس مضامین میں نمایاں نمبر حاصل کئے ہیں ۔یہ ہونہار طالبہ پاکستان کا روشن چہرہ اور تابناک مستقبل ہے اورقوم کی یہ بیٹی ہمارا فخر ہے ۔انہوں نے کہا کہ نرگس گل جب تک تعلیم حاصل کرنا چاہے گی پنجاب حکومت اس کے تعلیمی اخراجات برداشت کرے گی۔ وزیر اعلی نے کہا کہ گورنمنٹ گرلز ہائی سکول چکوال نمبر 1 کی ہیڈ مسٹریس میڈم شہناز اور پرائیویٹ ٹیچر شکیل عباس سمیت گاؤں والوں نے طالبہ کو تعلیم کے لئے جو مدد اور تعاون فراہم کیا وہ لائق تحسین ہے ۔انہوں نے سکول کی ہیڈ مسٹریس کی کارکردگی کو بھی سراہا ۔ وزیر اعلی نے کہا کہ جھگیوں میں رہنے والی اس بچی نے اپنی محنت سے ثابت کیا ہے کہ تعلیم کسی کی میراث نہیں ۔محنت اور عزم سے ہی کامیابیاں ملتی ہیں ۔انہوں نے کہا کہ یہ بچی ہماری ہیرو ہے جس نے مشکل حالات میں محنت کے ذریعے اپنی صلاحیتوں ،قابلیت اورذہانت سے امتحانات میں نمایاں پوزیشن حاصل کی ہے ۔وزیراعلیٰ نے نرگس گل کی والدہ ،خالہ ،ٹیچر،سکول کی ہیڈ مسٹریس اورگاؤں کی سرکردہ شخصیات کو بھی مبارکباد دی اور کہا کہ آج ہم قوم کے اس بیٹی کی محنت کو سلام پیش کرتے ہیں۔اس بچی کا تعلق ایسے گھر سے ہے جہاں تعلیم کا حصول ممکن نہ تھالیکن قوم کے اس تابناک مستقبل نے اپنی محنت اورذہانت کے ذریعے یہ مقام حاصل کیا ہے اور پوری قوم کو اس کی کامیابی پر فخر ہے۔یہ پاکستان کا درخشاں ستارہ ہے کیونکہ اس نے غربت میں رہ کر اخلاص کے ساتھ محنت کی اور آج امیروں کے بچوں سے بہتر مقام حاصل کیا ہے ۔ اگر محنت سے کام کیا جائے تو کوئی پہاڑ بھی منزل کے حصول میں حائل نہیں ہوسکتا، اگر محنت کی جائے تومشکل مشکل نہیں رہتی اورکم وسائل بھی راستے میں حائل نہیں ہوتے اور میرا ایمان ہے کہ محنت کے ذریعے معاشرے میں عزت و وقار کا مقام حاصل کیا جاسکتاہے اور قوم کی تقدیر بھی بدلی جاسکتی ہے۔وزیراعلی نے کہا کہ طالبہ نرگس گل کی بیمار نانی اماں کا مفت علاج کرایا جائے گا۔ نرگس گل کی والدہ آسیہ بی بی ، خالہ شازیہ ، ماموں ناصر، ٹیچر شکیل عباس اور گاؤں کی سرکردہ شخصیات بھی اس موقع پر موجود تھیں۔صوبائی وزیر سکولز ایجوکیشن رانا مشہود احمد اور متعلقہ حکام بھی اس موقع پر موجود تھے۔دوسری طرف وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے بہاولپور میں کانگو وائرس سے ایک نرس اور ڈاکٹرکے جاں بحق ہونے کے حوالے سے پیش کی جانے والی انکوائری رپورٹ کی روشنی میں بہاولپور وکٹوریہ ہسپتال کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ کو فی الفور معطل کرنے جبکہ پرنسپل قائداعظم میڈیکل کالج کو او ایس ڈی بنانے کاحکم دیا ہے۔ انہوں نے صوبہ بھر میں عیدالاضحی کے حوالے سے کانگووائرس سے بچاؤ کیلئے جامع اور موثر ایکشن پلان مرتب کرنے اور اس پر عملدرآمد کو یقینی بنانے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ کانگو وائرس کے حوالے سے ڈاکٹروں، نرسوں اور پیرامیڈیکل سٹاف کیلئے جامع تربیتی پروگرام شروع کیا جائے اور متعلقہ محکمے اس حوالے سے اپنی ذمہ داریاں پوری کریں اور آپس میں مربوط رابطہ رکھیں۔وہ آج یہاں کانگووائرس سے بچاؤ کیلئے کئے جانے والے اقدامات اور عیدالاضحی کے موقع پراحتیاطی اقدامات کا جائزہ لینے کے حوالے سے ویڈیو کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے۔ 3 گھنٹے سے زائد جاری رہنے والی ویڈیو کانفرنس کے دوران صوبہ بھر میں کانگووائرس کی صورتحال اور اس سے نمٹنے کیلئے حکمت عملی کا تفصیلی جائزہ لیا گیا۔وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بہاولپور میں کانگووائرس سے 2 افراد کے جاں بحق ہونے کے واقعہ پر مجھے دلی دکھ اور افسوس ہوا ہے اور وہ جاں بحق ہونے والے افراد کے لواحقین کے دکھ میں برابر کے شریک ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کتنے افسوس کی بات ہے کہ محکمہ صحت کی واضح ہدایات کے باوجود کانگو وائرس سے بچاؤ کیلئے وضع کردہ طریق کار پر عملدرآمد نہیں کیا گیا اور جاں بحق ہونے والی نرس اور ڈاکٹر کے علاج معالجے میں بھی احتیاطی تدابیر پر عملدرآمد میں واضح خامیاں پائی گئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مجھے ایک ایک جان عزیز ہے اور میں کسی صورت غفلت اور لاپراوہی کے نتیجے میں قیمتی جانوں کے ضیاع کی اجازت نہیں دے سکتا۔ انکوائری رپورٹ کی روشنی میں کانگووائرس سے متاثرہ افراد کے علاج معالجے میں خامیاں سامنے آئی ہیں اور اسی لئے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ کو معطل اور پرنسپل قائداعظم میڈیکل کالج کو او ایس ڈی بنانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس واقعہ میں غفلت اور کوتاہی کا مظاہرہ کرنے والے دیگر افراد کا بھی تعین کرکے ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائیگی۔ اجلاس میں مشیر صحت خواجہ سلمان رفیق،پارلیمانی سیکرٹری خواجہ عمران نذیر،چیف سیکرٹری ،متعلقہ سیکرٹریز،طبی ماہرین اوراعلی حکام نے سول سیکرٹریٹ سے ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شرکت کی جبکہ تمام ڈویژن کے کمشنرز صاحبان اور متعلقہ اضلاع کے ڈی سی اوز ویڈیولنک کے ذریعے اجلاس میں شریک ہوئے۔ وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے کہا ہے کہ ملتان میٹرو بس کا منصوبہ جنوبی پنجاب کے عوام کیلئے ایک شاندار تحفہ ہے اورمیٹرو بسیں چلنے سے عوام کو جدید، معیاری اور تیز رفتاری سفری سہولتیں میسر آئیں گی۔ ملتان میٹرو بس منصوبے پر دن رات کام ہو رہا ہے اور اس پراجیکٹ کا جلد افتتاح کر دیا جائے گا۔وہ آج یہاں ملتان میٹرو بس منصوبے پر پیش رفت کا جائزہ لینے کیلئے ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس سے خطاب کر رہے تھے۔وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت پنجاب عوام کو ٹرانسپورٹ کی بہترین سہولتوں کی فراہمی کے جامع پروگرام پر عمل پیرا ہے ۔ لاہوراور راولپنڈی،اسلام آباد میں میٹرو بس کے منصوبوں کے شاندار اجراء کے بعد ملتان میں میٹرو بس کا منصوبہ آخری مراحل میں ہے۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت جنوبی پنجاب کی ترقی کیلئے جس جامع پروگرام پر عمل پیرا ہے وہ اس پر بھی وزیراعلیٰ کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔چیف سیکرٹری، چیئرمین منصوبہ بندی و ترقیات، متعلقہ سیکرٹریز، ایم ڈی پنجاب ماس ٹرانزٹ اتھارٹی اور متعلقہ حکام نے سول سیکرٹریٹ سے ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شرکت کی۔ اراکین قومی و صوبائی اسمبلی، سید جاوید شاہ، عبدالغفار ڈوگر، رانا محمودالحسن، محمد علی کھوکھر، شہزاد مقبول بھٹہ، حاجی احسان الدین قریشی، کمشنر ملتان ڈویژن اور متعلقہ حکام ملتان سے ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شریک ہوئے۔ وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے کہا ہے کہ لاہور میں میٹروبس سسٹم کے فیڈرروٹس کے لئے جدید بسوں کا جلد آغاز کیا جارہاہے اوراس ضمن میں صوبائی دارالحکومت میں میٹرو بس سسٹم کے فیڈر روٹس چلانے کے پلان کو حتمی شکل دے دی گئی ہے اورپہلے مرحلے میں شہر کے 14 روٹس پر جدید ائیر کنڈیشنڈ بسیں جلد رواں دواں ہوں گی۔ ایم ڈی پنجاب ماس ٹرانزٹ اتھارٹی نے میٹرو بس پراجیکٹ کے فیڈر روٹس کے حوالے سے بریفنگ دی۔ ایم این اے مہر اشتیاق احمد، خواجہ احمد حسان ، چیئرمین منصوبہ بندی و ترقیات، سیکرٹری خزانہ، سیکرٹری ٹرانسپورٹ، کمشنر لاہور ڈویژن، سی ٹی او لاہور اور چیف ایگزیکٹو آفیسر لاہور ٹرانسپورٹ کمپنی نے ویڈیو لنک کے ذریعے سول سیکرٹریٹ سے اجلاس میں شرکت کی۔وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف کی زیرصدارت اعلی سطح کا اجلاس منعقد ہوا،جس میں گریٹر اقبال پراجیکٹ کے منصوبے پر پیش رفت کا جائزہ لیا گیا۔وزیراعلیٰ نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تحریک پاکستان کے دوران دی جانیوالی عظیم قربانیوں سے نئی نسل کو روشناس کرانا ایک قومی اورملی ذمہ داری ہے اوراس حوالے سے تحریک پاکستان کی اہمیت اجاگر کرنے کیلئے گریٹر اقبال پراجیکٹ خصوصی اہمیت کا حامل ہے۔انہوں نے کہاکہ پنجاب حکومت 120ایکڑ قطعہ اراضی پر گریٹر اقبال پراجیکٹ بنا رہی ہے ۔ خواجہ احمد حسان ،ڈی جی والڈ سٹی اتھارٹی لاہور، کمشنر لاہور ڈویژن، ڈی جی پی ایچ اے،وائس چےئرمین پی ایچ اے افتخار احمد، یوسف صلاح الدین اور اعلی حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔

شہباز شریف

مزید :

صفحہ اول -