رواں سال، مزید 2لاکھ 60ہزار پناہ گزینوں کی یورپ آمد

رواں سال، مزید 2لاکھ 60ہزار پناہ گزینوں کی یورپ آمد

  

نیو یارک (اے پی پی) بین الاقوامی ادارہ برائے مہاجرت کا کہنا ہے کہ اس سال اب تک بحیرہ روم کے سمندری راستوں سے مزید دو لاکھ ساٹھ ہزار سے زائد تارکین وطن یورپ پہنچے جب کہ انہی پرخطر راستوں میں تین ہزار سے زائد انسان سمندر میں ڈوب بھی گئے۔ بین الاقوامی ادارہ برائے مہاجرت (آئی او ایم) نے اعداد و شمار جاری کیے۔ آئی او ایم کے مطابق رواں برس کے دوران اب تک مشرق وسطیٰ، ایشیا اور افریقہ سے تعلق رکھنے والے مزید دو لاکھ 60 ہزار سے زائد مہاجرین اور تارکین وطن پناہ کی تلاش میں یورپ پہنچ چکے ہیں۔بین الاقوامی ادارہ برائے مہاجرت کے مطابق خستہ حال کشتیوں کے ذریعے بحیرہ روم اور بحیرہ ایجیئن کے خطرناک سمندری راستے اختیار کرتے ہوئے یورپ پہنچنے کی کوشش کے دوران اس سال یکم جنوری سے اب تک 3100 سے زائد مہاجرین اور تارکین وطن سمندر میں ڈوب چکے ہیں۔ یہ اعداد و شمار اس سال یکم جنوری سے لے کر اتوار 7 اگست 2016ء تک جمع کردہ ڈیٹا پر مبنی ہیں۔ گزشتہ برس کے مقابلے میں اس سال یورپ کا رخ کرنے والے پناہ کے متلاشی افراد کی مجموعی تعداد میں واضح کمی واقع ہوئی ہے جس کی ایک بڑی وجہ ترکی اور یورپی یونین کے مابین رواں برس مارچ کے مہینے میں طے پانے والا معاہدہ بھی ہے۔

مزید :

عالمی منظر -