پاکستان میں غیر ملکی سرمایہ کاری پر ایف پی سی سی آئی کے تحت سیمینار

پاکستان میں غیر ملکی سرمایہ کاری پر ایف پی سی سی آئی کے تحت سیمینار

  

کراچی(اکنامک رپورٹر) گورننس کے مسائل اور متعلقہ وزارتوں اور دیگر سرکاری محکموں میں شفافیت کے فقدان کی وجہ سے پاکستان میں غیر ملکی سرمایہ کاروں کو تشویش ہے ۔ اس بات کا اظہار ایف پی سی سی آئی میں منعقدہ غیرملکی سرمایہ کاری پر سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہی۔ اس موقع پر منیجنگ ڈائریکٹر پاکستان اسٹاک ایکسچینج ندیم نقوی نے کہا دنیا بھر کے سرمایہ کار پاکستان میں سرمایہ کاری کرنے کیلئے تیار ہیں لیکن وہ ملک میں سیاسی و سماجی استحکام اور معاشی پالیسی میں مستقل مزاجی دیکھنا چاہتے ہیں تاکہ وہ لوگ طویل مدت کیلئے سرمایہ کاری کرسکیں۔ان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان کو تعلیم کیلئے اپنا بجٹ بڑھانے کی ضرورت ہے کیونکہ اس وقت تعلیم یافتہ لوگوں کی انڈسٹری کو اشد ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا چین پاکستان اقتصادی راہداری منصوبہ بھی پاکستان میں غیر ملکی سرمایہ کاری کو متوجہ کررہا ہے حکومت کو چاہئے کہ اس منصوبے کے ذریعے خصوصی طور پر غیر ملکی سرمایہ کاروں کو پاکستان مدعو کرے۔ اس موقع پر عارف حبیب گروپ کے چیئرمین عارف حبیب نے کہا کہ پاکستان غیر ملکی سرمایہ کاروں کیلئے ایک منافع بخش ملک ہے کیونکہ اب ملک کے حالات کافی حد تک بہتر ہو چکے ہیں اس وجہ سے سرمایہ کاری کرنے کیلئے اس سے بہتر موقع نہیں مل سکتا۔ انہوں نے کہاکہ اس وقت پاکستان میں مختلف شعبوں میں دنیا کے مختلف ممالک جن میں امریکا، چین، آسٹریلیا، جرمنی اور دیگر ممالک کی کمپنیاں سرمایہ کاری کرنے آرہی ہیں جو کہ ایک نیک شگون ہے۔ایف پی سی سی آئی کے قائمقام صدر خالد تواب نے کہا کہ پاکستان میں 110ملین آبادی کام کرتی ہے اس میں 60فیصدحصہ نوجوانوں پر مشتمل ہے اور یہی وجہ ہے کہ غیر ملکی سرمایہ کاروں کو یہاں سرمایہ کاری کرنی چاہئے۔ انہوں نے مزید کہا کہ موجودہ حکومت 2018تک بجلی کی لوڈشیڈنگ کا خاتمہ کر دے گی اور توانائی بحران کا خاتمہ بھی ملک میں غیر ملکی سرمایہ کاری لائے گا۔ اس موقع پر سیمینار کے میزبان ایف پی سی سی آئی کی اسٹینڈنگ کمیٹی برائے غیر ملکی سرمایہ کاری کے چیئرمین ملک خدا بخش نے کہا کہ فیڈریشن مستقبل میں بھی اس طرح کے سیمینار منعقد کراتا رہے گا اور غیر ملکی سرمایہ کاری لانے میں اپنا کردار ادا کرتا رہے گا۔ اس موقع پر معروف صنعتکار مرزا اختیار بیگ، آباد کے چیئرمین حنیف گوہر، ڈائریکٹر پروجیکٹ سندھ بورڈ آف انویسٹمنٹ عبدالعظیم اقانی، فیڈرل بورڈ آف ریونیو کے غلام مرتضی کھوڑو اور جورڈن جیمزڈن نے بھی خطاب کیا۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -